’سندھ کا نیا بلدیاتی نظام اور سیاست ایک ساتھ نہیں چلے گی‘مصطفی کمال نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا 

’سندھ کا نیا بلدیاتی نظام اور سیاست ایک ساتھ نہیں چلے گی‘مصطفی کمال نے نیا ...
’سندھ کا نیا بلدیاتی نظام اور سیاست ایک ساتھ نہیں چلے گی‘مصطفی کمال نے نیا پنڈورا باکس کھول دیا 
سورس: File Photo

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاک سر زمین پارٹی(پی ایس پی)کےچیئرمین مصطفی کمال نےکہا ہےکہ سندھ کا نیا بلدیاتی نظام اورسیاست ایک ساتھ نہیں چلے گی،نیا بلدیاتی نظام پیپلز پارٹی کی اہل کراچی کی نسل کشی کی بدترین سازش ہے،نئےبلدیاتی نظام کو پی ایس پی مسترد کرتی ہےاورہرسطح پراسکےخلاف شدیدمزاحمت کرے گی،نیابلدیاتی نظام جمہوری تاریخ پر بدنما داغ ہے جس سے سندھ میں شدید بے چینی اور کراچی میں بدامنی پھیلنے کا خدشہ ہے۔ 

 پاک سر زمین پارٹی سنیٹرل ایگزیکٹو کمیٹی، نیشنل کونسل اور کراچی بھر کے پی ایس پی کے ذمہ داران کے ہنگامی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سابق ناظم کراچی نے کہا کہ سندھ اور اس کا دارلخلافہ کراچی پیپلز پارٹی کی جمہوری دہشتگردی کا شکار ہے، بلدیاتی حکومتوں کا قانون جس بھونڈے طریقے سے منظور کروایا گیا وہ دنیا کی جمہوری تاریخ پر ایک بدنما دھبہ ہے ، آمدنی پیدا کرنے والے جن تمام والے اداروں کو کراچی مونسپل کارپوریشن ( کے ایم سی) نے بنایا تھا ان سب کو سندھ حکومت نے اپنے قبضے میں لے لیا ہے، اس عمل سے کراچی کے شہریوں پر شب خون مارا گیا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاک سرزمین پارٹی آج کی تاریخ سے پیپلز پارٹی کی بدکردار تعصب زدہ حکومت کے خلاف اعلان جہاد کرتی ہے، ان حکمرانوں کو شرافت کی زبان سمجھ نہیں آتی، ہم نے شہر کو را کے تسلط سے اس لیے آزاد نہیں کرایا کہ آصف زرداری کی جاگیر بنا دی جائے، پیپلز پارٹی جمہوری دہشتگرد ہے اور دہشت گرد بنانے کی فیکٹری ہے، پیپلز پارٹی کے بدکردار حکمرانوں کی وجہ سے مایوس نوجوان دہشتگردی کے راستے پر لگتے ہیں، پینے کا پانی، تعلیم، سڑکیں، عوام کو کچھ میسر نہیں،پیپلز پارٹی کل کے دہشتگرد آج بنا رہی ہے، ریاست اسے آج ہی روکے، ہم پیپلز پارٹی کے ظلم اور تعصب کے خلاف اب رکنے والے نہیں ہیں، ہم ریاست کے وفادار ہیں حکومت کے نہیں۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -