ارشد شریف کا لیپ ٹاپ میرے پاس نہیں تفتیشی ٹیم ثبوت سامنے لائے، مراد سعید

   ارشد شریف کا لیپ ٹاپ میرے پاس نہیں تفتیشی ٹیم ثبوت سامنے لائے، مراد سعید

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 پشاور(مانیٹرنگ ڈیسک) سابق وفاقی وزیر مراد سعید نے مقتول صحافی ارشد شریف کے قتل کی تحقیقات کیلئے کینیا اور دبئی جانیوالی تفتیشی ٹیم سے ثبوت عوام کے سامنے لانے کا مطالبہ کردیا۔ایکسپریس نیوز کے مطابق سابق وفاقی وزیر مواصلات مراد سعید نے کہا ہے کہ انکے ساتھ صحافی ارشد شریف کی لیپ ٹاپ نہیں اور جو لوگ انوسٹی گیشن کیلئے گئے تھے وہ جو ثبوت لائے ہیں وہ قوم کے سامنے رکھیں۔پشاور پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سابق وفاقی وزیر مراد سعید کا کہنا تھا کہ ایف آئی کی طرف سے ان کو ابھی تک کوئی نوٹس نہیں آیا اور جو ٹیم انوسٹی گیشن کیلئے گئی تھی انکے پاس تمام سامان اور ثبوت ہیں۔پی ٹی آئی رہنما کا کہنا تھا کہ ارشد شریف نے اپنی شہادت سے پہلے بھی ان لوگوں کے بارے میں کہا تھا اور مقتول صحافی کے پاس یو اے ای کا ویلڈ ویزہ تھا اب پوچھنا یہ ہے کہ وہ کون لوگ تھے جن کی وجہ سے ارشد شریف نے یو اے ای چھوڑا۔ ارشد شریف کے جنازے سے پہلے کچھ لوگوں نے پریس کانفرنس کی، ارشد شریف پر 16 جعلی ایف آئی آر درج کی گئی جبکہ ان کو دھمکایا گیا۔ چیف جسٹس آف پاکستان ارشد شریف کے قتل کے تحقیقات کے لیے جوڈیشل کمیشن بنائے اور ارشد شریف کے قاتلوں کو جلد از گرفتار کیا جائے کیونکہ حکومت کی موجودہ فیکٹ فائڈنگ کمیٹی پر نہ ارشد شریف اور نہ ہم کو کوئی اعتماد، ان کے تمام بیانیے جھوٹ پر مبنی ہیں۔
مراد سعید

مزید :

صفحہ اول -