تھر کول استعمال، ایف پی سی ایل، ایس ای سی ایم سی میں مفاہمتی یادداشت پر دستخط 

  تھر کول استعمال، ایف پی سی ایل، ایس ای سی ایم سی میں مفاہمتی یادداشت پر ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 اسلام آباد (این این آئی)ایف ایف بی ایل پاور کمپنی لمیٹڈ (ایف پی سی ایل) نے کراچی میں کمپنی کے پاور پلانٹ میں تھر کے کوئلے کے استعمال کے لیے سندھ اینگرو کول مائننگ کمپنی (SECMC) کے ساتھ مفاہمت کی ایک یادداشت پر دستخط کر دیئے۔ کراچی میں ایف پی سی ایل فوجی فرٹیلائزر بن قاسم لمیٹڈ (FFBL) فرٹیلائزر کمپلیکس کے ساتھ 118 میگاواٹ کا کوئلے سے چلنے والا پاور پلانٹ چلا تی ہے۔گوادر پرو کے مطابق یہ ایم او یو توانائی کی بہتر قیمتیں حاصل کرنے کے ساتھ ساتھ زرمبادلہ پر بوجھ کو کم کرنے کے لیے مقامی وسائل کو بروئے کار لانے کے لیے ایک اہم قدم ہے۔ یہ کمپنی کی اقتصادی ترقی اور درآمدی توانائی پر انحصار کم کرکے قومی معیشت کو مضبوط بنانے کے عزم کی عکاسی کرتا ہے۔ گوادر پرو کے مطابق ایف پی سی ایل پاور پلانٹ کے الیکٹرک کو 60 میگاواٹ تک بجلی فراہم کرتا ہے، کمپنی کراچی کو بجلی فراہم کرنے کی انچارج ہے۔ کمپنی کی ویب سائٹ کے مطابق باقی بجلی ایف ایف بی ایل فرٹیلائزر کمپلیکس کو فراہم کی جاتی ہے۔ گوادر پرو کے مطابق ایس ای سی ایم سی صحرائے تھر میں پاکستان کی پہلی اوپن پٹ لگنائٹ کوئلے کی کان سے کوئلہ نکال رہی ہے، جس کی سالانہ گنجائش 7.6 ملین ٹن ہے۔ یہ کمپنی سندھ حکومت، اینگرو گروپ اور اس کے شراکت داروں اور چائنا پاکستان اکنامک کوریڈور (سی پیک) کے تحت چائنہ مشینری انجینئرنگ کارپوریشن (سی ایم ای سی) کے درمیان تعاون ہے۔ ایس ای سی ایم سی فی الحال 1,320 میگاواٹ کی مشترکہ صلاحیت کے ساتھ چار مائن ماؤتھ پاور پلانٹس کو کوئلہ فراہم کر تی ہے۔
تھرکول 

مزید :

صفحہ آخر -