نئے یونٹس کو ٹیکس نیٹ میں لانے کیلئے سروے مزید تیز

نئے یونٹس کو ٹیکس نیٹ میں لانے کیلئے سروے مزید تیز

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان(نیوز رپورٹر)محکمہ ایکسائز، ٹیکسیشن اینڈ نارکوٹکس نے ملتان ڈویژن سے اکتوبرتک 1 ارب 15کروڑروپے ٹیکس وصول کرلیا جو مقررہ ہدف سے 6 فیصد زائد ہے۔ان خیالات کااظہار ڈائریکٹر ایکسائز جام سراج احمد نے میڈیا سے گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ملتان ڈویژن کے لیے مقرر کردہ 2 ارب85کروڑ روپے کے مجموعی ہدف کو حاصل کرنے کی بھرپور کوششیں جاری ہیں ایکسائز ٹیموں نے ملتان ڈویژن سے 65 کروڑ پراپرٹی ٹیکس، 42 کروڑ روپے موٹر ٹیکس، 3کروڑ روپے پروفیشنل ٹیکس اور 70 لاکھ روپے کاٹن فیس اور دیگر مد میں (بقیہ نمبر41صفحہ6پر)
 وصول کرلیے ہیں جو مجموعی ہدف کا 41 فیصد ہے اور ہدف سے 37کروڑ روپے زیادہ ہے۔جام سراج نے مزید کہا کہ ٹیکس ریکوری کے حوالے سے سٹاف کی حوصلہ افزائی کا سلسلہ بھی جاری ہے تاکہ وہ بہترطریقے سے زیادہ سے زیادہ ٹیکس وصولی کرسکیں۔ انہوں نے مزید کہا کہ وہ خود روزانہ کی بنیاد پر آن لائن ویب پورٹل پردرج ہونے والی شکایات کا جائزہ لیتے ہیں اور ٹیکس گزاروں کے جائز مطالبات کو حل کرتے ہیں۔ڈائریکٹر ایکسائز نے بتایا کہ نئے یونٹس کو ٹیکس نیٹ میں لانے کے لیے سروے بھی جاری ہے جو رواں سال دسمبر تک مکمل ہو جائے گا۔انہوں نے بتایاکہ محکمہ ایکسائز نے 500مستقل نادہندگان سے13کروڑ روپے کی واجب الادا ٹیکس کی وصولی کیلئے سخت کارروائی کرکے 80فیصد واجبات وصول کرلیے ہیں اور بقایا واجبات کی وصولی کے لئے کارروائیاں جاری ہیں۔ انہوں  نے کہا کہ ایکسائز آفس میں صارفین کو گاڑیوں کی ٹرانسفر سہولت فراہم کرنے کے لیے 9خصوصی کاونٹر قائم کیے گئے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ پنجاب حکومت کی جانب سے دی گئی ٹیکس رعایت کی پیشکش ختم ہوگئی ہے اوراب ہرماہ 1 فیصد جرمانے کے ساتھ ٹیکس وصول کیا جا رہا ہے۔ انہوں نے ٹیکس دہندگان پر زور دیا کہ وہ اپنے واجبات وقت پر جمع کرائیں تاکہ کسی بھی قسم کی تکلیف سے بچا جا سکے۔محکمہ ایکسائز کی جانب سے ٹیکس گزاروں کی آگاہی کے لیے مہم بھی جاری تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ روڈ چیکنگ ٹیمیں جن میں طاہر عباس، عارف نیازی، ملک حسن عباس غیر رجسٹرڈ اور ٹوکن ٹیکس نادہندگان کے خلاف روزانہ کی بنیاد پر چھاپے مار رہی ہیں۔ شام کو ملک عبد المجید نانڈلہ کی سربراہی میں ٹیمیں کام کرتی ہیں۔ڈائریکٹر ایکسائز نے کہا کہ ٹیکس سے متعلق شکایات کے حوالے سے ان کے دفتر کے دروازے ہرعام وخاص کے لیے کھلے ہیں۔