صوبہ پنجاب میں ہر چوتھی خاتون گھریلو تشدد کا شکار

 صوبہ پنجاب میں ہر چوتھی خاتون گھریلو تشدد کا شکار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


ملتان(سٹی رپورٹر) ویمن ڈیویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کی رپورٹ کے مطابق پنجاب میں ہر چوتھی خاتون گھریلو تشدد کا نشانہ بنتی ہے۔خواتین پر تشدد کے حوالے سے ویمن ڈیویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کی رپورٹ کے مطابق کھانے میں نمک زیادہ ہوجانے پر بھی خواتین(بقیہ نمبر42صفحہ6پر)
 سے مارپیٹ کے واقعات نمایاں ہیں۔رپورٹ کے مطابق کھانا وقت پر نہ دینے کی پاداش میں بھی خواتین پر تشدد کیا جاتا ہے، کسی دوسری خاتون کیساتھ دوستی کا سوال بھی تشدد کا باعث بنتا ہے۔ویمن ڈیویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کی رپورٹ میں گھریلو خواتین پر بے وفائی کا الزام بھی تشدد کی بڑی وجہ بتایا گیا ہے۔رپورٹ کے مطابق شوہر کی نافرمانی پر خواتین کو سب سے زیادہ تشدد کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔ویمن ڈیویلپمنٹ ڈیپارٹمنٹ کے مطابق گزشتہ ایک سال میں گھریلو تشدد کے واقعات نمایاں رہے۔گزشتہ سال پنجاب بھر سے فوری مدد کے لیے خواتین کی 5 ہزار کالز موصول ہوئیں۔خواتین پر تشدد کے خلاف 15 روزہ آگاہی مہم 10 دسمبر تک جاری رہے گی۔
چوتھی خاتون