سائفر کیس ؛ چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو عدالت پیش نہ کرنے پر جیل حکام کی رپورٹ پر فیصلہ محفوظ

سائفر کیس ؛ چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو عدالت پیش نہ کرنے پر جیل ...
سائفر کیس ؛ چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو عدالت پیش نہ کرنے پر جیل حکام کی رپورٹ پر فیصلہ محفوظ

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)آفیشل سیکرٹ ایکٹ عدالت کے جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے  سائفر کیس میں چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو عدالت پیش نہ کرنے پر جیل حکام کی رپورٹ پر فیصلہ محفوظ  کرلیاگیا،عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا، جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے کہاکہ اس معاملے پر آرڈر پاس کروں گا۔

نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے مطابق آفیشل سیکرٹ ایکٹ عدالت کے جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے سائفر کیس میں سپیشل پراسیکیوٹر ذوالفقار نقوی نے کہاکہ عدالت کوئی بھی فیصلہ سنا سکتی ہے، ہم نے اس کو ماننا ہے،چیئرمین پی ٹی آئی کی زندگی کو خطرہ تھا جس پر عدالت نہیں لایا گیا،اسلام آباد ہائیکورٹ نے سائفر کیس کا ٹرائل 4ماہ میں مکمل کرنے کی ڈائریکشن دی ہے۔

سپیشل پراسیکیوٹر نے کہاکہ صرف اور صرف وزارت قانون کے نوٹیفکیشن کی وجہ سے ٹرائل سیٹ اسائیڈ ہوا،پہلے فیصلہ کرنا ہے ٹرائل جیل ہو یا جوڈیشل کمپلیکس میں،جیل ٹرائل میں دیکھا جا سکتا ہے کہ کتنے لوگ کمرہ عدالت میں آ سکتے ہیں۔

جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے کہاکہ مجھے اس سے غرض ہے کہ کیا پبلک کو دوران سماعت رسائی ہو گی یا نہیں،میں سیکشن 352کو نافذ کرنا چاہتا ہوں،وکیل سلمان صفدر نے کہا کہ سپرنٹنڈنٹ اڈیالہ جیل اور کس ایجنسی کے مطابق رپورٹ بنائی گئی،کم سے کم آج عدالت کے فیصلے کے مطابق چیئرمین پی ٹی آئی کو عدالت پیش کرنا چاہئے تھا،کون سا واقعہ ہو گیا جس سے سکیورٹی خدشات پیدا ہو گئے،عدالت میں چیئرمین پی ٹی آئی کو لانا تو سپرنٹنڈنٹ اڈیالہ جیل کی ذمے داری ہے،سپرنٹنڈنٹ اڈیالہ جیل مستعفی ہو یا چیئرمین پی ٹی آئی کو عدالت میں پیش کرے،وکیل سلمان صفدر نے 2بجے تک چیئرمین پی ٹی آئی کو عدالت پیش کرنے کی استدعا کردی،وکیل پی ٹی آئی نے کہاکہ سپرنٹنڈنٹ اڈیالہ جیل کو ہدایت کی جائے کہ چیئرمین پی ٹی آئی کو فوری پیش کریں،سپرنٹنڈنٹ اڈیالہ جیل اور سکیورٹی حکام کو عدالت میں ہونا چاہئے تھا،ایف آئی اے پراسیکیوٹرز کا کام نہیں جیل سپرنٹنڈنٹ کی وضاحتیں دینا۔

جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے عدالتی سٹاف کو مبارک باد دیتے ہوئے کہاکہ آپ کو شادی کی مبارکباد دیتا ہوں،وکیل سلمان صفدر نے کہاکہ کل ولیمہ تھا، لڑکا جان کی بازی کھیل کر عدالت پہنچا ہے،لڑکا ولیمے کے بعد پہنچ گیا تو چیئرمین پی ٹی آئی کو عدالت کیوں نہیں لا سکتے؟ سلمان صفدر کے جملے پر عدالت میں قہقہے لگ گئے۔

چیئرمین پی ٹی آئی اور شاہ محمود قریشی کو عدالت پیش نہ کرنے پر جیل حکام کی رپورٹ پر فیصلہ محفوظ  کرلیاگیا،عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا، جج ابوالحسنات ذوالقرنین نے کہاکہ اس معاملے پر آرڈر پاس کروں گا۔