کشمیر سینٹر کا 27 اکتوبر1947کی بھارتی یلغار کے خلافمظاہرہ

کشمیر سینٹر کا 27 اکتوبر1947کی بھارتی یلغار کے خلافمظاہرہ

  

لاہور(پ ر)کشمیرسنٹر لاہور کے زیراہتمام 27 اکتوبر 1947ءکو کشمیر پر بھارت کی فوجی یلغار کے اقدام کے خلاف پریس کلب کے سامنے عظیم الشان احتجاجی مظاہرے کا انعقاد کیا گیا جس میں پیپلز پارٹی آزادکشمیر لاہور‘ مسلم لیگ(ن) آزادکشمیر لاہورڈویژن‘جماعت اسلامی آزاد کشمیر پنجاب شاخ‘جمعیت علمائے اسلام آزادکشمیر لاہو ر ڈویژن ‘ کشمیر جرنلسٹس فورم ‘ مسلم لیگ (ن) لاہو ر ‘ جموں و کشمیر و کلاء محا ذ ‘کشمیر سٹڈی فورم ‘ مہاجرین لداخ فورم پاکستان کے رہنماﺅںاور کارکنان سمیت سٹی ٹیکنالوجی کالج کے طالب علموں کی بڑی تعداد نے شرکت کی مظاہرے سے ممتاز اقلیتی رہنماجے سالک‘ڈائریکٹرکشمیر سنٹرلاہور سردارساجد محمود‘رکن پنجاب اسمبلی ڈاکٹرفرزانہ نذیر ‘غلام محی الدین دیوان‘ سید نصیب اللہ گردیزی‘غلام عباس میر“علامہ پیرسیف الدین سیف‘ مولانا فصیح الدین سیف‘ اعجاز احمدکیانی‘فاروق آزاد‘بیگم زرقا جاوید‘راجہ شہزاداحمد‘ مبشر منیر اعوان ایڈووکیٹ‘ راجہ شیر زمان خان‘چوہدی یونس‘ مرزاعامر جرال‘ خالدمنہاس‘ڈاکٹراحسن مسعود‘محمدابراہیم لداخی ‘منظورحسین گیلانی نے خطاب کیا۔ جے سالک نے کہا کہ یہ اقوام متحدہ کیلئے شرم کی بات ہے کہ وہ نصف صدی سے زائد عرصہ گزرجانے کے باوجود کشمیر سے متعلق اپنی قراردادوں پر عمل درآمد نہیں کرواسکی‘ سردارساجد محمودنے کہا کہ بھار نے کشمیر پر فوجی یلغارکرکے عالمی اصولوں اور قوانین کی دھجیاں بکھیر کردیںڈاکٹرفرزانہ نذیر نے کہا کہ کشمیر کی آزادی کیلئے ہر پاکستانی اپنالہوپیش کرنے کیلئے تیاررہے غلام محی الدین دیوان نے کہا کہ بھارت کشمیریوں پر جتنے بھی مظالم ڈھالے ایک دن اسے ان مظالم کا سودسمیت حساب دینا پڑیگا علامہ پیرسیف الدین سیف نے کہا کہ بھارت کا ایک ہی علاج ہے اوروہ جہاد ہے غلام عباس میر نے کہا کہ بھارت خود کو دنیا کی سب سے بڑی جمہوریت کہتاہے لیکن وہ جمہوری اصولوں کے تحت کشمیریوں کو ان کا حق ِ خودارادیت دینے پر راضی نہیں سید نصیب اللہ گردیزی نے کہا کہ لندن میں کشمیریوں کے ہونیوالے لندن مارچ نے ثابت کردیا کہ کشمیری بھارت سے آزادی چاہتے ہیںبیگم زرقا جاوید نے کہا کہ آج یوم سیاہ مناتے ہوئے دنیابھر میں مقیم کشمیری عالمی برادری کو یہ پیغام دے رہے ہیں کہ وہ کل بھی بھارت کیخلاف تھے اور آج بھی اس کے خلاف ہیںچوہدری یونس نے کہا کہ بھارت اپنی فوجیں فوری طورپر کشمیر میں سے نکال لے۔اعجاز احمدکیانی نے کہا کہ کشمیری لاکھوں جانوں کی قربانیاں دینے کے باوجود تحریک آزادی جاری رکھے ہوئے ہیں۔ راجہ شہزاداحمد نے کہا کہ بھارت ساڑھے سات لاکھ مزید فوج بھی اگر کشمیر میں تعینات کردے تو وہ کشمیریوں کے جذبہ¿ حریت کو قید نہیں کرسکتا خالد منہاس نے کہا کہ ظلم وجبر کی رات جتنی طویل ہوآزادی کا سورج ضرور طلوع ہوکررہے گافاروق آزادنے کہا کہ پاکستانی قوم کشمیریوں کی پشت پر کھڑی ہے۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -