این اے 118: افسران حلقہ کی شہادتیں طلب نہ کرنے کا اقدام ہائیکورٹ میں چیلنج

این اے 118: افسران حلقہ کی شہادتیں طلب نہ کرنے کا اقدام ہائیکورٹ میں چیلنج

  

لاہور(نامہ نگار خصوصی )مسلم لیگ (ن) کے رکن قومی اسمبلی ملک ریاض نے انتخابی عذرداری کی سماعت کے دوران این اے 118کے ریٹرننگ افسراور پریزائیڈنگ افسروں کو بطور گواہ طلب نہ کرنے کا اقدام لاہور ہائیکورٹ میں چیلنج کر دیا ۔ملک ریاض نے چودھری عامر رحمن ایڈووکیٹ کی وساطت سے لاہور ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں موقف اختیار کیا ہے کہ الیکشن ٹربیونل ان کے خلاف تحریک انصاف کے رہنما حامد زمان کی انتخابی عذرداری پر سماعت کر رہا ہے، ٹربیونل کی کارروائی کے دوران الیکشن ریکارڈ نادرا کو تصدیق کیلئے بھجوایا گیا تاہم پولی تھین تھیلوں میں موجود 211تھیلے نادرا کو نہیں بھجوائے گئے اور بعد میں الیکشن ٹربیونل نے ان تھیلوں کو غیر متعلقہ قرار دیدیا ، درخواست گزار نے مزید موقف اختیار کیا ہے کہ انہوں نے الیکشن ٹربیونل سے استدعا کی کہ مذکورہ حلقے کے ریٹرنگ اور پریزائیڈنگ افسروں کو بطور گواہ طلب کیا جائے اور ان سے 211تھیلوں سے متعلق شہادتیں طلب کی جائیں تاکہ متعلقہ اور غیرمتعلقہ ووٹوں کاابہام ختم ہو سکے مگر ٹربیونل نے انکی درخواست مسترد کر دی، لاہور ہائیکورٹ میں دائر درخواست میں ملک ریاض نے استدعا کی ہے کہ الیکشن ٹربیونل کو این اے 118کے ریٹرننگ افسراور پریزائیڈنگ افسروں کو بطور گواہ طلب کر کے 211تھیلوں سے متعلق شہادتیں قلمبند کرنے کا حکم دیا جائے۔

چیلنج

مزید :

علاقائی -