قتل کے مقدمہ میں ملزم کو عمر قید اور 3 لاکھ مقتول کے ورثاء کوادا کرنے کا حکم

قتل کے مقدمہ میں ملزم کو عمر قید اور 3 لاکھ مقتول کے ورثاء کوادا کرنے کا حکم

  

لاہور (نامہ نگار)ایڈیشنل سیشن جج نسیم ورک نے ساجد نامی طالب علم کوقتل کرنے کے جرم میں ملزم محمد اسد کو عمر قید اور 3 لاکھ روپے معاوضہ مقتول کے ورثا کوفوری ادا کرنے کا حکم دے دیا ہے ایڈیشنل سیشن جج نسیم ورک کی عدالت میں کاہنہ پولیس نے میٹرک کے طالب علم ساجد کو ہلاک کرنے کے الزام میں ملزم محمد اسد کے خلا ف قتل کا چالان پیش کررکھا ہے عدالت نے ملزم محمد اسد پر جرم ثابت ہونے پر اسے عمر قید اور تین لاکھ روپے معاوضہ مقتول کے ورثاءکو ادا کرنے کا حکم دیا عدالت نے اپنے حکم میں لکھاہے کہ اگر ملزم معاوضہ ادا نہ کرے تو اسے مزید 6 ماہ قید بھگتنا ہوگی استغاثہ کے مطابق تھانہ کاہنہ میں مقتول کے والد خورشید احمد نے پرچہ درج کروایاکہ کا بیٹا گھر جا رہا تھا کہ اسی اثناءمیں مقامی گاو¿ں کے ایک اسد نامی نوجوان سے اس کی معمولی تلخ کلامی ہوگئی تھی جس پر اس نے طیش میں آکر اسے سر میں اینٹوں کے وار کر کے قتل کردیا تھا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -