لینڈ مافیا کراچی کے عوام کے حقوق پر بڑا ڈاکہ ڈالنے کی تیاری میں

لینڈ مافیا کراچی کے عوام کے حقوق پر بڑا ڈاکہ ڈالنے کی تیاری میں
لینڈ مافیا کراچی کے عوام کے حقوق پر بڑا ڈاکہ ڈالنے کی تیاری میں

  

کراچی ( مانیٹرنگ ڈیسک ) قدرت کا انمول تحفہ سمجھے جانے والے مینگروو جنگلات کو ختم کر کے قیمتی زمین پر قبضے کا دھندہ بلا روک ٹوک جاری ہے اور تازہ ترین اطلاعات کے مطابق کریک کے اطراف واقع مینگروو جنگلات اس قبضے کا نشانہ بننے جا رہے ہیں۔خبر رساں ویب سائٹ dawn.com کے مطابق ڈی ایچ اے ( DHA ) کی طوفانی رفتار سے پھیلتی سرحدیں گزری کریک کے اطراف واقع 490 ایکڑ پر محیط مینگروو جنگلات کو نگلنے کے لیے تیار ہیں۔ویب سائٹ کے مطابق water front developments نامی یہ منصوبہ شہری حقوق کو نظر انداز کرتے ہوئے چند انتہائی با اثر افراد کو مالا مال کرنے کے لیے بنایا گیا ہے۔سندھ ہائیکورٹ میں ایڈوکیٹ محفوظ یار کی دائر کردہ درخواست کے مطابق یہ منصوبہ ایک ڈیل پر مبنی ہے جس کے تحت DHA کچھ رقبہ ادائیگی کر کے خریدے گا جبکہ باقی رقبہ میں سے کچھ کو ڈویلپ کر کے مالک (یا مالکان ) کے حوالے کیا جائے اور بچ جانے والا رقبہ ڈی ایچ اے کے پاس رہے گا۔

ڈی ایچ اے فیز 8 کے نئے تیار شدہ نقشے میں جسے Zavia Architecture نے تیار کیا ہے،مینگروو کے 490 ایکڑ رقبے کو بھی ڈی ایچ اے کا حصہ دکھایا گیا ہے۔دوسری جانب ڈی ایچ اے کے ایک سینئر افسر نے اس بات کی واضح طور پر تردید کی ہے کہ ان کی طرف سے کسی کو بھی اس قسم کی ٹاﺅن پلاننگ کی اجازت دی گئی ہے۔

مزید :

رئیل سٹیٹ -