مریم اورنگزیب نے وفاقی حکومت پر الزامات کی بوچھاڑ کر دی، حکومتی ترجمانوں کو امتحان میں ڈال دیا

مریم اورنگزیب نے وفاقی حکومت پر الزامات کی بوچھاڑ کر دی، حکومتی ترجمانوں کو ...
مریم اورنگزیب نے وفاقی حکومت پر الزامات کی بوچھاڑ کر دی، حکومتی ترجمانوں کو امتحان میں ڈال دیا

  

 اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان مسلم لیگ (ن) نے کہاہے کہ آج پاکستان کا آئین چوری ہوگیا،حکومت اٹھارویں ترمیم، جزائر پر حملہ آور ہے،آج ان نالائقوں,نااہلوں اور چوروں کی وجہ سے پاور سیکٹر میں گردشی قرضہ 2400 بلین ہوچکا ہے اسکا حساب کون دے گا؟کرائے کے ترجمان یہ پریس کانفرنس نہیں کرتے کہ 35روپے سے آٹا 80روپے کیسے ہوگیا؟یہ نہیں بتاتے کہ چینی 52روپے سے کیسے 110 روپے ہوگئی؟آٹا چینی چوری میں ایک ہزار ارب کا ڈاکہ ڈل چکا ہے،بجلی اور گیس چوری کا کُھرا بھی وہیں ملتا ہے جہاں آٹا چینی چوری کا ملتا ہے،انکی وفاقی کابینہ میں ایک ارب درختوں میں اب تک 50ارب کا ڈاکہ ڈل چکا ہے،وفاقی حکومت میں بیٹھی اے ٹی ایم مشینوں کی جیب بھرنا حکومت کی ترجیح ہے،پی ڈی ایم چوروں سے چھٹکارا دلائے گی۔

تفصیلات کے مطابق  خرم دستگیر خان کے ہمراہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے مریم اورنگزیب نے کہا کہ چور سب سے زیادہ خود شور مچا رہا ہے،چوری اتنی زیادہ ہے کہ ہم اس کو ہر روز لے کر آئیں گے،آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی رپورٹ پر پاور ڈویژن ناراض ہے کہ اس کو پارلیمنٹ میں کیوں لے کر آئے؟ پاکستان کی عوام اڑھائی سال سے مہنگائی میں پس رہی ہے،مہنگائی کی شرخ 15 فیصد تک پہنچ چکی،جن کو حکومت چور کہتی ہے ان کے دور میں مہنگائی کی شرخ 5 فیصد تھی۔

مریم اورنگزیب نے کہاکہ ابتک سات ہزار ارب کے صرف پاور سیکٹر میں فنڈز کی خورد برد کئے،پچاس ارب کا ڈاکہ آڈیٹر جنرل کی رپورٹ کے مطابق ڈل چکا،رپورٹ کے مطابق 55 ارب صوبوں کو کم دیا گیا،پاور سیکٹر کا گردشی قرضہ بھی بڑھ چکا،آج تحریک نصاف کی حکومت میں بجلی کا فی یونٹ 32 روپےمیں ہے،چاہے وہ صنعتکار ہو پاکستان کی عوام ہو,کاشتکار ہو یا بزنس مین ہو ہر کوئی اس وقت بجلی کا بل ادا کرتے ہوئے بلبلا رہے ہیں،آج یہ خود اجازت دےکر مہنگی بجلی بنواتے ہیں فرنس آئل کی امپورٹ کرتے ہیں کیونکہ وفاقی کابینہ میں جن کی ملکیت میں یہ پاور پروجیکٹ ہیں انکی جیبیں بھرنی ہیں کیونکہ انکی وجہ سے ہی عمران خان کے بنی گالہ کا خرچہ چلنا ہے،نوازشریف نے بجلی کوبنا یا، نااہل حکومت اس کی پروڈکشن میں چوری کررہی ہے،کرائے کے ترجمان کہتے ہیں نوازشریف مہنگی بجلی بنا کر گیا،ہمارے دور میں صرف پاور سیکٹر کا گردشی قرضہ گیارہ سو بلین تھا جو آج چوبیس سو بلین تک پہنچ گیا ہے۔

انہوں نے کہاکہ ایک شخص جو ملک پر مسلط ہے اس کو کوئی فرق نہیں پڑتا،وہ مافیا جو کابینہ میں شامل ہے اگر ان کی جیبیں نہ بھریں تو بنی گالہ کا خرچہ کون اٹھائیگا؟وفاقی حکومت میں بیٹھی اے ٹی ایم مشینوں کی جیب بھرنا حکومت کی ترجیح ہے، پریس ٹاک میں کہا جاتا ہے کہ پی ڈی ایم چور ہے،اس کٹھ پتلی حکومت کو ایک ہی کام آتا ہے وہ دوسروں کو چور کہنا اور مودی کا یار کہنا،چور وہ ہیں جنہوں نے آٹا اور چینی کا بحران پیدا کیا گیا،چور وہ ہیں جن کے دور میں جنہوں نے روز گار چوری کیا،پاکستانی عوام جانتی ہے کہ غداری کون کررہا ہے؟ اس ٹولے نے ملک کا بیڑا غرق کر دیا، ان کی چوری اتنی زیادہ ہے کہ ہم اس کو ہر روز لے کر آئیں گے۔ انہوں نے کہاکہپی ڈی ایم چوروں سے چھٹکارا دلائے گی، نیب کہتی ہے شہباز شریف پر صاف پانی اور پلاٹوں کی انکوائری سے کچھ نہیں ملا،یہ بی آر ٹی پشاور کی طرح پورے پاکستان کو مفلوج بنانا چاہتے ہیں۔

مزید :

قومی -