کیا اپوزیشن بھی ابھی نندن کو بھارت کے حوالے کرنے پر راضی تھی ؟ علی محمد خان نے بتا دیا

کیا اپوزیشن بھی ابھی نندن کو بھارت کے حوالے کرنے پر راضی تھی ؟ علی محمد خان نے ...
کیا اپوزیشن بھی ابھی نندن کو بھارت کے حوالے کرنے پر راضی تھی ؟ علی محمد خان نے بتا دیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیرعلی محمد خان نے کہا کہ آصف زرداری، شہبازشریف نے ابھی نندن کو واپس بھیجنے کی حمایت کی تھی، آج کس منہ سے یہ ہمیں طعنے دے رہے ہیں؟تاریخ میں پہلی بار ایسا وزیراعظم آیا جس نے سب چوروں کو اکٹھا کر دیا۔

نجی ٹی وی سماءنیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے علی محمد خان نے کہا ہے کہ ہمیں حساس میٹنگز کی باتیں ایسے نہیں کرنی چاہئیں۔ ان کا کہنا تھاکہ ابھی نندن کو واپس بھیجنے کے لیے میٹنگ میں آرمی چیف،وزیرخارجہ شاہ محمودقریشی، آصف زرداری، شہبازشریف اور دیگر لوگ بھی شریک تھے ، وہاں کسی نے بھی ابھی نندن کو واپس بھیجنے کی مخالفت نہیں کی۔ انہوں نے کہا کہ اگر ان کو اعتراض تھا تو اس وقت بات کرتے ، اب ایسے قومی مفادات کی میٹنگز کی باتیں باہر کرنے کا کوئی مقصد نہیں ہے۔

علی محمد خان کا کہنا تھا کہ تاریخ میں پہلی بار ایسا وزیراعظم آیا جس نے سب چوروں کو اکٹھا کر دیا۔ میں کسی کو غدارکہنے کے حق نہیں لیکن پی ڈی ایم کے سٹیج سے بلوچستان میں جہاں ہر روز جوان شہادتیں دے رہے ہیں وہاں بلوچستان کی آزادی کی بات کی گئی۔ کراچی میں قائد کے مزار پر کھڑے ہوکر اردو زبان کے خلاف بات کی گئی۔ محمود خان اچکزئی نے کہا کہ افغان بارڈر کو اکھاڑ کر پھینک دیں ۔ان کا مزید کہنا تھا کہ اگر ان کو لگتا ہے کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے تو یہ سپریم کورٹ میں پٹیشنز کیوں نہیں دائر کیوں نہیں کرتے۔

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -