اسلام آباد ہائیکورٹ نےپرائیویٹ تعلیمی ادارے کو الاٹ شدہ پلاٹ پر تعمیرات سے روک دیا

اسلام آباد ہائیکورٹ نےپرائیویٹ تعلیمی ادارے کو الاٹ شدہ پلاٹ پر تعمیرات سے ...
اسلام آباد ہائیکورٹ نےپرائیویٹ تعلیمی ادارے کو الاٹ شدہ پلاٹ پر تعمیرات سے روک دیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نےپرائیویٹ تعلیمی ادارے کو الاٹ شدہ پلاٹ پر تعمیرات سے روک دیا۔
جسٹس میاں گل حسن اورنگزیب نے 9 صفحات پر مشتمل حکم نامہ جاری کر تے ہوئے پرائیویٹ تعلیمی ادارے کو الاٹ شدہ پلاٹ پر تعمیرات سے روکا، حکمنامے میں کہا گیا ہے وزارت تعلیم بتائے ڈی جی فیڈرل ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن ابھی تک تعینات کیوں نہیں ہوا، بادی النظر میں پبلک پرائیویٹ پارٹنرشپ سکول میں صرف 20 فیصد کیلئے فری تعلیم آئینی خلاف ورزی ہے ، سیکرٹری بطور ڈی جی فیڈرل ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن اضافی چارج میں پالیسی فیصلہ نہیں کر سکتے ، فیڈرل ڈائریکٹوریٹ آف ایجوکیشن نے پلاٹ کے معاملے پر وزارت تعلیم سے جن خدشات کا اظہار کیا وہ رپورٹ پیش کریں، آئندہ سماعت تک پلاٹ پر کسی قسم کی کوئی تعمیرات نہیں ہوں گی،، ٹیچرز ایسوسی ایشن کی درخواست پر کیس کی مزید سماعت 21 نومبر تک ملتوی کر دی گئی۔

روزنامہ پاکستان کا واٹس ایپ چینل جوائن کرنے کیلئے یہاں کلک کریں۔