عبداللہ نامی غیر قانونی تنزانیہ سے موذمبیق باڈر جمپ کروانے والی گینگ کا لیڈر ہے

عبداللہ نامی غیر قانونی تنزانیہ سے موذمبیق باڈر جمپ کروانے والی گینگ کا لیڈر ...

  

پریٹوریا(بیورورپورٹ) تنزانیہ میں عبداللہ نامی مقامی باشندہ غیر قانونی طریقے ے تنزانیہ سے موذمبیق باڈر جمپ کروانے والی گینگ کا لیڈر ہے۔حالیہ سروے میں یہ ثابت ہو گیا ہے کہ یہ آج سے نہیں بلکہ پچھلے 7 سالوں سے اس دھندے میں برسر اول ہے دارالسلام تنزانیہ کا یہ رہائشی مسلم ہے اور بنگہ دیش‘ پاکستان صومالیہ‘ انڈیا اور دوسرے ملکوں سے تعلق رکھنے والے لڑکوں کو ایجنٹی کے ذریعے گاڑیوں پر بٹھا کر دوسرے ملکوں میں ڈنکی لگوانے میں اس گینگ کا ماسٹر مائنڈ یہ عبداللہ نامی شخص ہی ہے جو دوسرے ملکوں سے ساوتھ افریقہ جانے کے لئے اس کے جال میں پھنس جاتے ہیں اور پھر یہ ان کو بھوکا پیاسا رکھ کر ان کے گھر والوں سے پیسے منگوانے پر مجبور کرتے ہیں اور بعد میں ان لڑکوں کو موذ مبیق کا باڈرجمپ کروا کر اگلے کالوں کے ہاتھوں میں دے دیتے ہیں تنزانیہ کی انٹیلی جنس ثبوت کے ساتھ اس عبداللہ کو آج تک نہیں پکڑ سکی ۔

مزید :

عالمی منظر -