جعلی ادویات کیخلاف گرینڈ آپریشن پسماندہ علاقوں تک محدود

جعلی ادویات کیخلاف گرینڈ آپریشن پسماندہ علاقوں تک محدود

  

                                  لاہور(جاوید اقبال)محکمہ صحت کی طرف سے صوبائی دارالحکومت کو جعلی اور غیر معیاری اد ویات سے پاک کرنے کے لئے شروع کیا گیا گرینڈ آپریشن دم توڑنے لگا ہے ،مشیر صحت اور سیکرٹری صحت کی طرف سے تشکیل دی گئی ،چھاپہ مار ٹیموں کی کارروائی پسماندہ علاقوں میں قائم چھوٹے موٹے میڈیکل سٹوروں تک محدود ہو گئی ، بڑے میڈیکل سٹوروں اور معروف فارمایسیوں اور بڑے پرائیویٹ ہسپتالوں میں قائم پرائیویٹ فارمیسیوں کو اس آپریشن سے باہر نکال دیا گیا ہے جس سے یہ آپریشن عملاً ناکام ہوتا دکھائی دینے لگا ہے اس آپریشن کا حال ہوتا وہی نظر آرہا ہے جو ماضی کے آپریشنوں کا ہوا ۔تفصیلات کے مطابق صوبائی دارالحکومت میں جعلی ادویات کے خلاف شروع آپریشن کی اطلاعات سے بڑا ڈرگ مافیا ”زیر زمین“ چلا گیا جس کی بڑ ی وجہ ماہر ین صحت ڈرگ انسپکٹرز کی ناقص حکمت عملی بتائی جارہی ہے آپریشن کے لئے تشکیل دی گئی تینوں ٹیموں نے غلط حکمت عملی اپناتے ہوئے آپریشن کا رخ پسماندہ علاقوں اورچھوٹے سٹوروں کی طرف موڑ دیا جس کی وجہ سے بڑے میڈیکل سٹوروں اور فارمیسیوں پر بکنے والی سمگل شدہ غیر معیار ی ادویات اور غیررجسٹرشدہ سرجیکل اور ڈسپوزیبل آئیٹم غائب کرلی گئی ہیں شہر میں آپریشنوں میں استعمال کئے جانے والا سرجیکل سوچرز(یعنی زخم سینے کا دھاگہ)بھی بڑے سٹوروں پر جعلی بک رہا تھا جس سے ایسے مریض جن کے آپریشن میں یہ دھاگہ استعمال کیا جاتا ان کے زخم خراب ہوجاتے یا آپریشن خراب ہوجاتے یہ ہی وجہ ہے کہ شہر میں آپریشن خراب ہونے کے مریضوں کی شرح میں اضافہ ہوگیا ہے ماہرین کا کہنا ہے کہ تشکیل دی گئی چھاپہ مار ٹیموں نے شہر میں جعلی ادویا ت اور سرجیکل آئٹم فروخت کرنے وا لے بڑے مگر مچھوں کی بجائے چھوٹی چھوٹی مچھلیوں کے خلا ف آپریشن کیا ،اس طرز کا آپریشن کرکے ڈرگ انسپکٹرز نے بڑے مگر مچھوں کو سازوسامان غائب کرنے کا موقعہ فراہم کیا اور آج بھی یہ سامان مختلف انداز میں فروخت کیا جارہا ہے اس طرح یہ آپریشن بھی عملًا ناکام ہونے کے امکانات پید ا ہوگئے ہیں اس حوالے سے ای ڈی او ہیلتھ لاہور ڈاکٹر ذوالفقار چودھری سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ آپریشن بلا امتیاز جاری ہے اب تک دو جعلی فیکٹریاں پکڑی گئی ہیںبڑ ی فارمیسیاں بھی اس آپریشن کی زد میں آئی ہیں وسائل کم اورمسائل زیادہ ہیں لیکن ان وسائل میں ہی مسائل پر قابو پائیں گے غیر قانونی کام میں ملوث افراد کو کسی صورت نہیں چھوڑا جائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 1 -