نواز شریف نے کشمیریوں کا کیس ٹھوس انداز میں پیش کیا

نواز شریف نے کشمیریوں کا کیس ٹھوس انداز میں پیش کیا

  

                                                  اسلام آباد (اے پی پی)لائن آف کنٹرول کے دونوں اطراف بڑی تعداد میں معروف کشمیری رہنماﺅں نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے 69ویں سیشن سے وزیراعظم محمد نواز شریف کے خطاب کا پرجوش خیرمقدم کیا ہے جنہوں نے عالمی برادری کی توجہ مسئلہ کشمیر کے حل کی جانب مبذول کرائی۔میر واعظ سمیت کل جماعتی حریت کانفرنس سمیت رہنماﺅں نے پرزور انداز میں مسئلہ کشمیر اجاگر کرنے اور دنیا کی توجہ دیرینہ مسئلے کی طرف دلانے پر وزیراعظم کی تعریف کی جو جنوبی ایشیاءمیں امن،سلامتی اور اقتصادی ترقی کیلئے ضروری ہے۔جماعت اسلامی پاکستان کے امیر سراج الحق نے وزیر اعظم کے اقوام متحدہ کی جنر ل اسمبلی کے خطاب کو متوازن قرار دیتے ہو ئے کہا ہے کہ میاں محمد نواز شریف نے مسئلہ کشمیر پر جرات مندانہ موقف اختیار کیا ہے۔میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے انہوں نے کہاکہ مسئلہ کشمیر حل کئے بغیر پاکستان اور بھارت کے حالات معمول پر نہیں آسکتے ،کشمیریوں کو حقِ خود ارادیت دینا ایک جائز مطالبہ ہے جس پر اقوام متحدہ بھی قرارداد منظور کرچکی ہےمقبوضہ کشمیر کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق نے وزیراعظم کے خطاب کا خیرمقدم کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم نواز شریف نے حقیقت پسندانہ موقف پیش کیا ہے۔انہوں بھارتی سیاسی قیادت پر زوردیا کہ وہ مسئلہ کشمیر سے متعلق تاریخی حقائق کو جھٹلانے کے بجائے اس کے دائمی اور منصفانہ حل کیلئے پاکستان اور کشمیری حریت پسند قیادت کے ساتھ بامعنی مذاکرات کا راستہ اختیار کرے۔ جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین یاسین ملک نے اپنے بیان میں کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے خطاب سے کشمیریوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ہے اور مسئلہ کشمیر دوبارہ عالمی افق پر نمودار ہوا ہے۔کشمیریوں کو بین الاقوامی مدد کی ضرورت ہے۔آز اد جموں و کشمیر قانون ساز اسمبلی میں اپوزیشن کے رہنما راجہ فاروق حیدر خان نے وزیراعظم کے خطاب کو سراہتے ہوئے کہا کہ اس سے تحریک آزادی کشمیر کو نئی جہت ملے گی۔جماعت اسلامی آزاد جموں وکشمیر کے امیر عبدالرشید ترابی نے کہا کہ نواز شریف نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی میںمسئلہ کشمیر پر پاکستان اور کشمیریوں کی امنگوں کی ترجمانی کی ہے۔ وفاقی وزیر برائے امور کشمیر و گلگت بلتستان چوہدری محمد برجیس طاہر نے کہا کہ وزیر اعظم پاکستان محمد نواز شریف نے اقوام متحدہ کی جنرل اسمبلی کے اجلاس میں جو موقف اپنایا اس سے ثابت ہو گیا کہ کشمیر پاکستانیوں کے ایمان کا حصہ ہے‘مسئلہ کشمیر کے پر امن حل تک جنوبی ایشیا میں پائیدار امن قائم نہیں ہو سکتا۔۔ آزاد جموں و کشمیر قانون اسمبلی میں ڈپٹی پارلیمانی رہنما چوہدری طارق فاروق نے کہا کہ وزیراعظم نے کشمیریوں کی آواز موثر طور پر بلند کی۔ نواز شریف نے عالمی رہنماﺅں کو مسئلہ کشمیر پر اقوام متحدہ کی قراردادوں سے آگاہ کیا جن پر عملدرآمد نہیں کیاگیا۔انہوں نے مقبوضہ کشمیر میں خواتین اوربچوں کی حالت زار پر بھی توجہ دلائی۔ ایک اور کشمیری رہنما سردار خالد ابراہیم نے بھی عالمی فورم پر مسئلہ کشمیر سے متعلق پاکستان کا واضح موقف پیش کرنے پر وزیراعظم نواز شریف کی تعریف کی۔

مزید :

صفحہ اول -