شام پر فضائی حملے کی قیادت ، خاندان نے مریم منصوری سے تعلق توڑ لیا

شام پر فضائی حملے کی قیادت ، خاندان نے مریم منصوری سے تعلق توڑ لیا
شام پر فضائی حملے کی قیادت ، خاندان نے مریم منصوری سے تعلق توڑ لیا

  

 ابو ظہبی(مانیٹرنگ ڈیسک ) متحدہ عرب امارات کی پہلی خاتون پائلٹ مریم المنصوری کی شام میں دولت اسلامی پر فضائی حملے کی قیادت کرنے پر اس کے خاندان والوں نے ناراضگی ظاہر کرتے ہوئے اس سے ناطہ توڑنے کا اعلان کیا ہے۔

غیر ملکی میڈیاکے مطابق ایک روز پہلے تو امارات ایئر فورس کی میجر مریم المنصوری کی شام میں دولت اسلامیہ پر حملوں کو امریکہ اور یورپ سمیت امارات میں بھی بڑے فخر سے دیکھا جا رہا تھا لیکن اسکے ایک روز بعد ہی انکی اپنی فیملی کی جانب سے مخالفت شروع ہو گئی ہے اور اس سے تعلق ختم کرنےکا اعلان کر دیا گیا ہے۔

مریم کے خاندان نے آئی ایس آئی ایس پر بمباری کو شام کے سنی ہیروز کے خلاف حملے قرار دیا ہے اور مزید کہا گیا ہے کہ شام میں کئے جانے والے حملے بڑے ظالمانہ ہیں۔مریم کی فیملی نے اپنے بیان میں شام کے انقلاب کی حمایت کرتے ہوئے ان سے ناطہ توڑنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسکے علاوہ جو بھی ہمارے شامی بھائیوں پر حملے کر رہے ہیں وہ ظالم ہیں۔

 یاد رہے کہ منصوری قبیلہ امارات میں کافی با اثر سمجھا جاتا ہے جس کا حکومت میں وزیر تجارت بھی موجود ہے ۔ دارالحکومت ابو ظہبی کا یہ دوسرا بڑا قبیلہ ہے اور اس تناظر میں اس کی فیملی کی جانب سے جاری کردہ بیان بڑا معنی خیز اور اہم سمجھا جا رہا ہے۔

مزید :

بین الاقوامی -