امریکی اخبار نے وائٹ ہاﺅس کی سیکیورٹی کا پول کھول دیا

امریکی اخبار نے وائٹ ہاﺅس کی سیکیورٹی کا پول کھول دیا
امریکی اخبار نے وائٹ ہاﺅس کی سیکیورٹی کا پول کھول دیا

  



واشنگٹن (مانیٹرنگ ڈیسک) ایک امریکی اخبار نے وائٹ ہاﺅس کی سیکیورٹی کا راز فاش کردیا اور انکشاف کیا کہ صدرکی رہائش گاہ پر گولیاں چل گئیں جنہیں سیکیورٹی آفیسر نے گاڑی کے سائلنسر کا پٹاخہ سمجھااور یہ خبر سامنے آنے کے بعد صدر اوباما اوراُن کی اہلیہ صدرمملکت کو سیکیورٹی فراہم کرنے والی ایجنسی’ سیکرٹ سروس‘پر برس پڑے ۔

’نیویارک ٹائمز‘کے مطابق نومبر 2011ءمیں ایک شخص نے وائٹ ہاﺅس کے سامنے گاڑی روکی اور صدارتی رہائش گاہ پر سات گولیاں فائرکیں جو دوسری منزل پر دیواروں اور کھڑکیوں کولگیں جن سے کھڑکیوں کے شیشے ٹوٹ گئے اور مسلح شخص گاڑی میں بیٹھ کر روانہ ہوگیاتاہم کسی کو کانوں کان خبر نہیں ہوئی ۔ یہ فائرنگ اُس وقت ہوئی جب اوباما کی ایک بیٹی گھر پر موجود تھی ۔

رپورٹ کے مطابق سیکیورٹی آفیسر کو گولیاں چلنے کا شبہ ہوالیکن اگلے ہی لمحے اُس نے سمجھاکہ یہ گاڑی کے سائلنسر کی آواز تھی ۔

واضح رہے کہ یہ خبر ایک ایسے وقت پر سامنے آئی جب سے کچھ دن قبل ایک مسلح شخص سیکیورٹی پر تعینات اہلکاروں کو چکمادے کر وائٹ ہاﺅس کے مین گیٹ سے داخل ہونے میں کامیاب ہوگیا تھااوراُس کے بعد سیکیورٹی پر تعینات اہلکاروں اور سیکیورٹی پلان کا ازسرنوجائزہ لینے کی ہدایت کردی گئی ہے ۔

مزید : بین الاقوامی