چین کا ترقی پذیر ممالک کے لیے دو ارب ڈالر کی امداد کا اعلان

چین کا ترقی پذیر ممالک کے لیے دو ارب ڈالر کی امداد کا اعلان

  



نیویارک(اے این این) چین کے صدر شی جن پنگ نے ترقی پذیر ممالک کی معاونت اور سرمایہ کاری میں اضافے کے لیے دو ارب ڈالر پر مشتمل امداد دینے کا عہد کیا ہے۔اقوام متحدہ کے ترقیاقی منصوبوں سے متعلق اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے چینی صدر کا کہنا تھا کہ آئندہ 15 برسوں میں یہ سرمایہ کاری 12 ارب ڈالر تک پہنچ سکتی ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ چین دنیا کے پسماندہ ممالک کے قرضے معاف کر سکتا ہے، جن میں جزائر میں مشتمل کئی چھوٹے ممالک بھی شامل ہیں۔صدر شی جن پنگ نے کہا کہ بیجنگ آئندہ پانچ برسوں میں 600 غیرملکی منصوبوں میں معاونت فراہم کرنے کے علاوہ سکالرشپس میں بھی اضافہ بھی کرے گا۔نیویارک میں منعقدہ اجلاس میں ان کا کہنا تھا: دنیا پر نظر دوڑائی جائے تو اس وقت امن اور ترقی دو اہم امور ہیں۔کئی عالمی چیلنجز، جن میں یورپ میں پناہ گزینوں کا بحران بھی شامل ہے، کا بنیادی حل امن اور تعمیر و ترقی میں پایا جاتا ہے۔مختلف نوعیت کے چیلنجز اور مشکلات کا سامنا کرتے ہوئے، ہمیں ترقی کی کنجی اپنے ہاتھ میں رکھنی چاہیے۔

صرف ترقی کے ذریعے ہم تصادم کی وجوہات سے چھٹکارا پا سکتے ہیں۔چینی صدر ژی چن پنگ نے کہا ہے کہ ترقی یافتہ ممالک کو ترقی پذیر ممالک کا ہاتھ تھامنا ہو گا، دنیا بھر میں قیام امن یقینی بنانا ہو گا۔انہوں نے عالمی ترقی کیلئے چار نکاتی ایجنڈا بھی دیدیا ۔ چین کے صدر شی ژن پنگ کا کہناتھا کہ ترقی اور امن وقت کی اہم ضرورت ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ دنیا کو درپیش مسائل کا حل ترقی اور امن میں چھپا ہے، روزگار کے مواقع کی تلاش، ترقی کیلئے ماحول بہتر بنانا، شراکت داری کی ضرورت کو سمجھنااورباہمی روابط کو فروغ دینا آج کی ضرورت ہے۔

مزید : کامرس


loading...