پاکستان میں بم دھماکوں اور دہشت گردی میں بیرونی قوتیں ملوث ہیں: حافظ سعید

پاکستان میں بم دھماکوں اور دہشت گردی میں بیرونی قوتیں ملوث ہیں: حافظ سعید

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) امیر جماعۃالدعوۃ پاکستان پروفیسر حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ پاکستان کو درپیش مسائل کے حل کیلئے کشمیرکی آزادی ضروری ہے‘پاکستان میں بم دھماکوں اور دہشت گردی میں بیرونی قوتیں ملوث ہیں‘ مسلم ملکوں کو بیرونی قوتوں کی غلامی سے نجات دلانے کیلئے جرأتمندانہ راستے اختیار کرنے ہوں گے‘ فرقہ واریت سے امت ٹکڑوں میں تقسیم ہوئی جس سے مسلمانوں کو ناقابل تلافی نقصان پہنچا ہے‘ علماء کرام امت مسلمہ کی رہنمائی کا فریضہ سرانجام دیں اور انہیں اسلام دشمن قوتوں کی سازشوں کے مقابلہ کیلئے متحد وبیدار کیا جائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے قذافی سٹیڈیم میں عید الاضحی کے بڑے اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ہزاروں مردوخواتین نے ان کی امامت میں نماز عید ادا کی جبکہ کشمیر، فلسطین و دیگر خطوں کے مظلوم مسلمانوں اوروطن عزیز پاکستان میں امن و سلامتی کیلئے خصوصی دعائیں کی گئیں۔ حافظ محمد سعید نے اپنے خطاب میں کہاکہ قرآن پاک ہر دور اور ہر قسم کے حالات میں مسلمانوں کی رہنمائی کرتا ہے لیکن افسوسناک امر یہ کہ ہم نے اسلام کو نماز، روزہ تک محدود کر رکھاہے قومی و بین الاقوامی سطح کے معاملات میں اسلامی تعلیمات سے رہنمائی نہیں لی جاتی۔ مسلم حکمرانوں کی ذمہ داری اپنی عقل، سوچ اور فکر کے مطابق فیصلے کرنا نہیں مسلمانوں کو اللہ کے دین پر جمع کرنا ہے اگر ہم ایسا کریں گے تو ہر حال میں اللہ کی مدد ہمارے ساتھ ہو گی ۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان لاکھوں جانوں کا نذرانہ پیش کرکے کلمہ طیبہ کی بنیاد پر حاصل کیا گیا ہے۔ یہ ملک اس خطہ کے مسلمانوں کیلئے بہت بڑی نعمت ہے اس کا دفاع ہر شخص کی بنیادی ذمہ داریوں میں شامل ہے۔ ملک میں بیرونی سازشوں کے توڑ کیلئے اللہ کا قانون نافذ کرنا ہو گا۔ انہوں نے کہا کہ مسلمان اپنے گھروں میں قرآن و سنت نافذ کریں خواتین پردہ کریں اپنے بچوں کی تربیت دینی بنیادوں پر کریں انہیں ایسے تعلیمی اداروں میں داخل نہ کروائیں جہان ان کے عقیدے و ایمان برباد ہو نے کا اندیشہ ہو۔حافظ محمد سعید نے کہاکہ امت مسلمہ اسلام دشمن قوتوں کے مقابلہ کیلئے سیسہ پلائی دیوار بن کرکھڑی ہو جائے۔ عوام کا ہر طبقہ ملک و ملت کے دفاع کیلئے اپنا کردار ادا کرے۔ اغیار کی غلامی سے نکلے بغیر خطوں وملکوں کاتحفظ ممکن نہیں ہے۔بھارت آٹھ لاکھ فوج کے ذریعہ طاقت و قوت کے بل بوتے پر کشمیریوں کی جدوجہد آزادی کچلنا چاہتا ہے لیکن وہ اپنے اس مذموم منصوبہ میں کامیاب نہیں ہو سکتا۔ انہوں نے کہاکہ پاکستان لا الہ الا اللہ کی جاگیر ملک ہے وطن عزیز کے ایک ایک چپے چپے کا دفاع اللہ کے دین کا تحفظ کرنا ہے۔ حکومت مسلمانوں کو اس نقطے پر جمع کرے کوئی ان شا ء اللہ پاکستان کی طرف میلی آنکھ سے نہیں دیکھ سکے گا۔کشمیریوں کی قربانیوں نے بھارت کا غرور و تکبر خاک میں ملا دیا، مظلوم کشمیریوں کو مکمل آزادی ملنے تک جنوبی ایشیا میں امن کا قیام ممکن نہیں ۔ انہوں نے کہاکہ اسلام دشمن قوتوں کی پوری کوشش ہے کہ مسلمانوں کا رخ غاصب قوتوں کی بجائے اپنے ہی مسلمان بھائیوں کی طرف ہو۔ہمیں ان سازشوں کو سمجھتے ہوئے اتحادویکجہتی کے ذریعہ ناکام بنانے کی ضرورت ہے۔

مزید : صفحہ آخر


loading...