جنسی جرائم میں مذہبی رہنما ﺅں کا ملوث ہوناافسوسناک ہے: پوپ فرانسس

جنسی جرائم میں مذہبی رہنما ﺅں کا ملوث ہوناافسوسناک ہے: پوپ فرانسس
جنسی جرائم میں مذہبی رہنما ﺅں کا ملوث ہوناافسوسناک ہے: پوپ فرانسس

  



نیویارک(اے این این)عیسائیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے کہا ہے کہ جنسی زیادتی کے جرائم میں مذہبی رہنما ﺅں کا ملوث ہوناانتہائی افسوسناک ہے،یہ ظلم اب کسی بھی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا،زیادتی کے کیسز کو شرم کی وجہ سے خفیہ نہیں رکھا جانا چاہئے۔

عیسائیوں کے روحانی پیشوا پوپ فرانسس نے دورہ امریکا کے دوران زیادتی کا شکار بچوں سے متاثر کن خطاب کیا۔خطاب میں پوپ نے کہا کہ بچوں کو بڑوں کی شفقت، محبت، ہمدردی اور حفاظت کی ضرورت ہوتی ہے لیکن مجھے افسوس ہے کہ آپ کی معصومیت کو بری طرح نقصان پہنچایا گیا،کبھی آپ کے اپنے اہل خانہ کے ہاتھوں، اورکبھی ان مذہبی رہنماﺅں کے ہاتھوں جن پر آپ کی تربیت کی ذمہ داری تھی،آپ کے ساتھ ہونے والا سلوک انسانی وقار کی توہین ہے۔پوپ فرانسس نے کہا کہ جو لوگ جنسی زیادتیوں کا نشانہ بنے وہ ان سے معذرت خواہ ہیں کہ جب انہوں نے یا ان کے اہل خانہ نے آواز اٹھائی، تو کسی نے ان کی آواز پر کان نہ دھرے لیکن آپ لوگ یقین رکھیں خدا دیکھ اور سن رہا ہے۔

پوپ نے بچوں کو حوصلہ دیتے ہوئے کہا کہ میری درخواست ہے آپ سچائی کی راہ پر چلتے رہیں جو لوگ ان زیادتیوں میں ملوث رہے ہیں انہیں اپنے اعمال کا جواب دہ ہونا ہوگا،پوپ فرانسس نے ان افرادسے وعدہ کیا کہ زیادتی کے شکار بچوں کی زندگی کی بحالی کے لیے وہ ہمہ وقت چوکس رہیں گے۔

مزید : بین الاقوامی


loading...