”کسی انسان کے پاس یہ حق نہیں کہ وہ۔۔۔“ سعودی علماءنے ایسا فتویٰ دے دیا کہ جان کر آپ بھی داد دیں گے

”کسی انسان کے پاس یہ حق نہیں کہ وہ۔۔۔“ سعودی علماءنے ایسا فتویٰ دے دیا کہ ...
”کسی انسان کے پاس یہ حق نہیں کہ وہ۔۔۔“ سعودی علماءنے ایسا فتویٰ دے دیا کہ جان کر آپ بھی داد دیں گے

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) فرقہ پرستی کا پرچار کرنے اور ایک دوسرے کو کافر قرار دینے والوں نے مسلمانوں کو جتنا نقصان پہنچایا ہے اتنا شاید کسی دشمن نے بھی نہ پہنچایا ہو گا۔ بدقسمتی کی بات ہے کہ دوسروں پر کفر کے فتوے صادر کرنے والے اپنے حق میں طرح طرح کے دلائل بھی گھڑ لیتے ہیں، لیکن سعودی عرب کے ممتاز ترین علماءپرمشتمل کونسل آف سعودی سکالرز نے ایک انتہائی اہم بیان جاری کرتے ہوئے ایسے تمام دلائل کو رد کر دیا ہے۔
عرب نیوز کی رپورٹ کے مطابق کونسل کی جانب سے کہا گیا ہے کہ کسی کو کافر قرار دینے کا اختیار انسانوں کے پاس نہیں بلکہ یہ اللہ اور اس کے رسول ﷺ کا اختیار ہے۔ تکفیر کو ایک سنجیدہ معاملہ قرار دیتے ہوئے کہا گیا ہے کہ یہ خون خرابے کا جواز پیدا کرتی ہے، اس کی وجہ سے وراثت کی تقسیم کے مسائل پیدا ہوتے ہیں اور نکاح تک منسوخ ہوجاتے ہیں۔
کونسل آف سینئر سکالر زکی جانب سے یہ بھی کہاگیا ہے کہ حکومتوں اور حکمرانوں کو کافر قرار دینا تو اور بھی خطرناک ہے کیونکہ اس کے نتیجے میں تشدد کے لئے اشتعال انگیزی، ہتھیاروں کے استعمال، معاشرے میں افراتفری پھیلانے، کرپشن اور خون خرابے کی راہ ہموار ہوتی ہے۔ کونسل کی جانب سے واضح طور پر کہا گیا ہے کہ دوسروں کو کافر قرار دینے کا نظریہ گمراہ کن ہے اور اس کی اسلام میں کوئی جگہ نہیں ہے۔

مزید :

عرب دنیا -