اردو سائنس بورڈ اوریونیورسٹی آف گجرات کے درمیان مفاہمتی یادداشت پر دستخط

اردو سائنس بورڈ اوریونیورسٹی آف گجرات کے درمیان مفاہمتی یادداشت پر دستخط

  

لاہور( ایجوکیشن رپورٹر)اردو سائنس بورڈ اوریونیورسٹی آف گجرات کے درمیان مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی تقریب گزشتہ روز بورڈ کے دفتر میں منعقد ہوئی۔ وائس چانسلر یونیورسٹی آف گجرات ڈاکٹر ضیاء القیوم اورڈائریکٹر جنرل اردو سائنس بورڈ ڈاکٹر ناصر عباس نیّر نے مفاہمتی یادداشت پر دستخط کیے۔اس مفاہمتی یادداشت کے تحت یونیورسٹی آف گجرات میں قائم مرکزالسنہ وعلوم ترجمہ اوراردوسائنس بورڈ کے اشتراک سے فنِ ترجمہ اورترجمہ نگاری کو فروغ دینے کے لیے اقدامات کرناہے ۔ دونوں ادارے باہمی تعاون واشتراک سے مختلف موضوعات پرتراجم کتب کی شکل میں شائع کریں گے۔ مرکزالسنہ وعلوم ترجمہ مختلف سائنسی، فنی اورسماجی موضوعات پراہم کتابوں کا انگریزی اوردیگر زبانوں سے اردو میں ترجمہ کرکے بورڈ کو دے گااوربورڈ ان کتابوں کو شائع کرے گا۔

دونوں ادارے مل کر فن ترجمہ کے حوالے سے کانفرنسیں، ورکشاپ اوردیگر سرگرمیاں منعقد کریں گے۔ دونوں اداروں کے مابین یہ مفاہمتی یادداشت پانچ سال کے لیے ہوگی۔

مفاہمتی یادداشت پر دستخط کی تقریب میں ڈی جی پنجاب انسٹی ٹیوٹ آف لینگوئج ، آرٹ اینڈ کلچر ڈاکٹر صغریٰ صدف ،صدر مرکز السنہ وعلوم ترجمہ یونیورسٹی آف گجرات ڈاکٹر غلام علی، ڈائریکٹرمیڈیا شیخ عبدالرشید اوربورڈ کے افسران نے شرکت کی۔ اس موقع پر وائس چانسلر یونیورسٹی آف گجرات ڈاکٹر ضیاء القیوم نے بات چیت کرتے ہو ئے کہا کہ علوم ترجمہ کو سائنسی علوم کی حیثیت حاصل ہے۔ یونیورسٹی آف گجرات اوراردو سائنس بورڈ کا باہمی تعاون دونوں اداروں کے لیے بہت سودمند ثابت ہوگا۔طے شدہ ہدف کے تحت بورڈکے ساتھ ترجمہ کے حوالے سے منصوبوں پر کا م کیاجائے گا۔انہوں نے کہا کہ محکمہ قانون پنجاب کے ساتھ ایک معاہدے کے تحت قانونی دستاویزات کا ترجمہ یونیورسٹی کا بہت بڑاکارنامہ ہے۔ ڈی جی اردو سائنس بورڈ نے خیالات کا اظہارکرتے ہوئے کہا کہ دونوں علمی اداروں کے مابین یہ رسمی ایم اویو نہیں ہوگا، اسے عملی جامہ پہنانے کے لیے ٹھوس منصوبہ بندی کے مطابق کام کیاجائے گا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -