آپ ٹوئٹر پر لمبی ٹویٹس بھی کرسکیں گے

آپ ٹوئٹر پر لمبی ٹویٹس بھی کرسکیں گے

  

سان فرانسسکو(مانیٹرنگ ڈیسک)سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر نے صارفین کی سہولت مدنظر رکھتے ہوئے ٹویٹ میں حروف کی زیادہ سے زیادہ تعداد دگنی کرنے کا اعلان کردیا ہے۔سوشل میڈیا پر مختصر پیغامات کیلیے مخصوص ویب سائٹ ٹوئٹر نے صارفین کی دیرینہ مشکل دور کرنے کی تیار کرلی ہے جس میں اظہارِ خیال کیلیے حروف کی سابقہ گنجائش 140 حروف سے بڑھا کر 280 یعنی دگنی کی جارہی ہے۔ٹوئٹر کے چیف ایگزیکٹو جیک ڈوسرے کا کہنا ہے کہ میسجنگ پلیٹ فارم میں ایک بڑی تبدیلی کی جارہی ہے تاکہ حروف کی مقررہ حد کو دگنا کرتے ہوئے صارفین کو پیغام رسانی اور اظہارِ خیال کیلیے پوری بات کرنے کا موقع مل سکے۔انہوں نے کہا کہ ابتدائی طور پر صارفین کی محدود تعداد نئی سہولت سے فائدہ اٹھاسکے گی تاہم تجرباتی بنیادوں کے بعد اسے عام کردیا جائے گا۔ جیک ڈوسرے ٹویٹ کیلیے حروف کی نئی زیادہ سے زیادہ تعداد (280 حروف) کو استعمال کرتے ہوئے کہا کہ کمپنی اپنی سروسز کو مزید بہتر بنانے کیلیے کوشاں ہے جس کی ایک جھلک یہ چھوٹی سی تبدیلی ہے۔

۔واضح رہے کہ ٹوئٹر کو سماجی رابطوں کی دیگر ویب سائٹس کے مقابلے میں سنجیدہ افراد اور ادارے زیادہ استعمال کرتے ہیں تاہم ایک ٹویٹ میں صرف 140 حروف کی حد صارفین کیلئے خاصی مشکل ثابت ہوتی ہے۔

یہی وجہ ہے کہ ٹوئٹر سنجیدہ فورم ہونے کے باوجود فیس بک اور انسٹاگرام سے زیادہ مقبولیت حاصل نہیں کرسکا۔

سان فرانسسکو(مانیٹرنگ ڈیسک)سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر نے صارفین کی سہولت مدنظر رکھتے ہوئے ٹویٹ میں حروف کی زیادہ سے زیادہ تعداد دگنی کرنے کا اعلان کردیا ہے۔سوشل میڈیا پر مختصر پیغامات کیلیے مخصوص ویب سائٹ ٹوئٹر نے صارفین کی دیرینہ مشکل دور کرنے کی تیار کرلی ہے جس میں اظہارِ خیال کیلیے حروف کی سابقہ گنجائش 140 حروف سے بڑھا کر 280 یعنی دگنی کی جارہی ہے۔ٹوئٹر کے چیف ایگزیکٹو جیک ڈوسرے کا کہنا ہے کہ میسجنگ پلیٹ فارم میں ایک بڑی تبدیلی کی جارہی ہے تاکہ حروف کی مقررہ حد کو دگنا کرتے ہوئے صارفین کو پیغام رسانی اور اظہارِ خیال کیلیے پوری بات کرنے کا موقع مل سکے۔انہوں نے کہا کہ ابتدائی طور پر صارفین کی محدود تعداد نئی سہولت سے فائدہ اٹھاسکے گی تاہم تجرباتی بنیادوں کے بعد اسے عام کردیا جائے گا۔ جیک ڈوسرے ٹویٹ کیلیے حروف کی نئی زیادہ سے زیادہ تعداد (280 حروف) کو استعمال کرتے ہوئے کہا کہ کمپنی اپنی سروسز کو مزید بہتر بنانے کیلیے کوشاں ہے جس کی ایک جھلک یہ چھوٹی سی تبدیلی ہے۔واضح رہے کہ ٹوئٹر کو سماجی رابطوں کی دیگر ویب سائٹس کے مقابلے میں سنجیدہ افراد اور ادارے زیادہ استعمال کرتے ہیں تاہم ایک ٹویٹ میں صرف 140 حروف کی حد صارفین کیلیے خاصی مشکل ثابت ہوتی ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ٹوئٹر سنجیدہ فورم ہونے کے باوجود فیس بک اور انسٹاگرام سے زیادہ مقبولیت حاصل نہیں کرسکا۔

مزید :

میٹروپولیٹن 4 -