اپوزیشن لیڈر کی تبدیلی پارلیمنٹ کے استحکام کے خلاف ہے: بلا ول بھٹو

اپوزیشن لیڈر کی تبدیلی پارلیمنٹ کے استحکام کے خلاف ہے: بلا ول بھٹو
 اپوزیشن لیڈر کی تبدیلی پارلیمنٹ کے استحکام کے خلاف ہے: بلا ول بھٹو

  

لاہور ( مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیاں) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے قائد حزب اختلاف سید خورشید احمد شاہ کیخلا ف پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم کے اتحاد کی شدید مذمت کرتے ہوئے ان کی کوشش کو پارلیمان کے استحکام اور اس کی قوت پر حملہ قرار دیا ہے۔اپنے بیان میں بلاول بھٹو نے مزید کہا ہے کہ ر یموٹ کنٹرول کوششیں ناکام ہوں گی۔ سید خورشید شاہ نے پارلیمان کو مضبوط بنانے کیلئے کلیدی کردار ادا کیا اور ہر اس بحران کے دوران پارلیمنٹ اور جمہوریت کے تقدس کی حفاظت کی کہ جس سے پارلیمنٹ اور جمہوریت کے سٹیک ہولڈرز کو خطرہ تھا۔ انہوں نے نشاندہی کرتے ہوئے کہا یہ سید خورشید احمد شاہ کی حکمت عملی اور کاوشیں ہی تھیں جن کے باعث پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم دونوں اس وقت پارلیمان میں بیٹھی ہیں اور پارلیمانی نظام کی جڑوں پر کلہاڑا مارنے کے باوجود وہ اس کی مراعات سے مستفید ہو رہی ہیں،مگر وہ لوگ جو ریموٹ کنٹرولڈ کوششوں کے ذریعے حزب اختلاف میں اکثریت حاصل کرنے کے درپے ہیں، حقیقتاً وہ جمہوری نظام کی روح کیخلاف کام کر رہے ہیں۔ پارلیمان کو چیف الیکشن کمشنر، چیئرمین نیب اور نگران حکومت کی تقرری کے متعلق حاصل اختیارات کو کسی فرد یا گروہ کی خواہشات کی بنیاد پر تبدیل نہیں کیا جا سکتا۔ پی ٹی آئی اور ایم کیو ایم کے اچانک پینگیں بڑھانے پر پوری قوم شش و پنج کی حالت میں ہے، کیونکہ ابھی کچھ عرصہ پہلے تک دونوں جماعتیں ایک دوسرے کا گلا کاٹنے کے درپے تھیں۔ پی پی پی چیئرمین نے کہا سید خورشید احمد شاہ نے پارلیمان کے اختیارات کو تقویت دینے کیلئے سخت محنت کی اور اپنی فہم و فراست سے اس کی خودمختیاری کی حفا ظت کی۔ جمہوریت اور حزب اختلاف میں موجود سچے جمہوریت پسند نشیب و فراز سے بالاتر ہوکر سید خورشید احمد شاہ کیساتھ کھڑے ہیں ،بطور قائد حزب اختلاف ان کی کارکردگی شاندار ہے اور پی پی پی کی جدوجہدِ جمہوریت کیلئے باعثِ فخر ہے۔

بلاول بھٹو

مزید :

صفحہ اول -