عراق، دہشت گردی اور جنسی زیادتی میں ملوث 42افراد کو پھانسی دیدی گئی

عراق، دہشت گردی اور جنسی زیادتی میں ملوث 42افراد کو پھانسی دیدی گئی

  

بغداد(این این آئی)عراقی حکومت نے دہشت گردی اور جنسی زیادتی کے الزام میں بیالیس افراد کو سزائے موت دے دی ۔غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق عراقی وزیر انصاف حیدر زاملی نے کہا کہ صدارتی کونسل کی جانب سے سزائے موت کے عدالتی احکامات کی توثیق کے بعد ناصریہ شہر میں 42 مبینہ ملزمان کی پھانسی کی سزا پر عمل درآمد کیا گیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ ان میں سے چند ملزمان کو جنسی زیادتی جبکہ دیگر کو قومی سلامتی اداروں پر حملوں اور دہشت گردی کی کارروائیوں کے جرم میں سزا دی گئی۔عراقی سنی کونسل نے پھانسی کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے الزام عائد کیا ہے کہ ملزمان کو صفائی کا موقع نہیں دیا گیا ۔اس سال کے دوران اجتماعی سزائے موت پر عمل درآمد کا یہ سب سے بڑا واقعہ ہے۔انسانی حقوق کی تنظیم ایمنٹسی کے مطابق چین، ایران اور سعودی عرب کے بعد عراق میں سب سے زیادہ سزائے موت دی جاتی ہیں۔

مزید :

عالمی منظر -