الیکشن کمیشن ، این اے 120کا انتخاب کالعدم قرار دینے کی درخواست خارج

الیکشن کمیشن ، این اے 120کا انتخاب کالعدم قرار دینے کی درخواست خارج

  

اسلام آباد(آن لائن) الیکشن کمیشن نے لاہور کے حلقے این اے 120کے انتخابات کالعدم قرار دینے سے متعلق شاہد اورکزئی ایڈووکیٹ کی درخواست خارج کر دی ۔چیف الیکشن کمشنر کی سربراہی میں چار رکنی بینچ نے گزشتہ روز شاہد اورکزئی کی جانب سے دائر درخواست کی سماعت کی۔ اس موقع پر کمیشن کی خاتون ممبر نے درخواست گزار شاہد اورکزئی سے استفسار کیا کہ لاہور کے حلقے میں ضمنی انتخابات منعقد ہوچکے ہیں اب آپ کیا کہتے ہیں جس پر شاہد اورکزئی ایڈووکیٹ نے کہاکہ میں الیکشن کمیشن کو یہ بتانے آیا ہوں کہ سپریم کورٹ کے حکم پر الیکشن کمیشن نے سابق وزیر اعظم میاں نواز شریف کو نااہل قرار دیا ہے جبکہ آئین میں یہ کہیں نہیں لکھا ہے کہ سپریم کورٹ کے احکامات پر الیکشن کمیشن کسی بھی ممبر اسمبلی کو ڈی نوٹیفائی کر سکتا ہے۔ انہوں نے کہاکہ یہ اختیار سپیکر قومی اسمبلی کے پاس ہے اور اس کی جانب سے الیکشن کمیشن کو ریفرنس بھیجا جائے گا،جس پر کمیشن کے ممبر سندھ نے کہاکہ اس سے قبل سابق وزیر اعظم یوسف رضا گیلانی کے کیس میں بھی الیکشن کمیشن نے یہی طریقہ کار اختیار کیا تھا اس بارے میں آپ کیا کہتے ہیں جس پر شاہد اورکزئی ایڈووکیٹ نے کہاکہ وہ توہین عدالت کا مسئلہ تھا اس کے علاوہ سپریم کورٹ کسی ممبر اسمبلی کو ڈی نوٹیفائی کرنے کیلئے الیکشن کمیشن کو ہدایات نہیں دے سکتی ہے انہوں نے مثال دیتے ہوئے کہاکہ اگر سپریم کورٹ شاہد اورکزئی کو ہدایت کرے کہ کسی ممبر اسمبلی کو ڈی نوٹیفائی کرو شاہد اورکزئی کون ہوتا ہے کسی کو ڈی نوٹیفائی کرنے والا جس پر چیف الیکشن کمشنر نے برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اب آپ عدالتوں کی توہین کرنے لگے ہیں انہوں نے درخواست کو خارج کر دیا ۔

درخواست خارج

مزید :

صفحہ اول -