سی جی شراکتی مینجمنٹ، فیصلے، شفا فیت ، جو ابدہی و افادیت کا نام ہے:سعید مہدی

سی جی شراکتی مینجمنٹ، فیصلے، شفا فیت ، جو ابدہی و افادیت کا نام ہے:سعید مہدی

  

لاہور(خبرنگار) انسٹیٹیوٹ آف کاسٹ اینڈ مینجمنٹ اکاؤنٹنٹ (آئی سی ایم اے پی ) کی جانب سے کارپوریٹ گورننس کے ضوابط کے مو ضو ع پر کانفرنس کا انعقاد کیا گیا۔ کانفرنس کے مہمان خصوصی چیئرمین سوئی ناردرن گیس پائپ لائنز لمیٹڈ محمدسعید مہدی تھے جنہوں نے اپنی تقریر میں کارپوریٹ گورننس کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے کہا کارپوریٹ گورننس کی بدولت بہترین کاروباری پریکٹس کی جانب بڑھا اور کارو با ری اداروں میں قانون کی عملدرامد کو یقینی بنایا جا سکتا ہے۔ کارپوریٹ گورننس میں وہ تمام روابط شامل ہیں جو کمپنی کے بورڈ، مینجمنٹ، کھا تے داران اور دیگر اسٹیک ہولڈر بشمول ملازمین کے درمیان موجود ہوتے ہیں۔ کارپوریٹ گورننس شراکتی مینجمنٹ، باہمی فیصلے، شفا فیت ، جو ابدہی اور افادیت کا نام ہے۔ انسٹیٹوٹ آف کاسٹ مینجمنٹ اکاونٹنگ کے صدر محمد اقبال غوری نے خطاب میں سکیورٹی ایکسچینج کمیشن پا کستا ن (ایس اسی سی پی ) پر روشنی ڈالتے ہوئے کہا کارپوریٹ گورننس ان اصولوں پر قائم ہے جس کی بدولت کاروبار کو تمام تر شفافیت کیساتھ ممکن بنایا جا سکتا ہے۔ خواجہ احرار الحسن ، احمد اشرف اور آل عمران(ایف سی ایم اے )سمیت الطاف حسین خان نے بھی تقریب سے خطا ب کیااورکہا انسٹیٹیوٹ آف کاسٹ اینڈ مینجمنٹ پاکستان، کاروباری اداروں میں کارپوریٹ گورننس کے ضو ا بط لاگو کرنے میں اہم کردار ادا کر رہا ۔حکومت کی بدانتظامی سے بدعنوانی میں اضافہ اور منافع میں کمی ہوتی ہے جبکہ اچھی حکومت میں اضافی پیداوار اور معاشی اکائیوں کی کا رکردگی بہتر ہوتی ہے۔ کارپوریٹ گورننس کے تحت چلنے والی کمپنیوں سے اعتماد منسوب ہوتا ہے۔ ایک خود مختار اور متحرک ڈائریکٹرز کی بورڈ میں موجودگی سے کمپنی کی استعداد کار اور اچھی شہرت میں اضافہ ہوتا ہے۔ بین الاقوامی سرمایہ دار کسی کمپنی میں سرمایہ کاری کرنے سے پہلے کارپوریٹ گورننس کے ضوابط کا متعلقہ کمپنی میں اطلاق ضرور مدِ نظر رکھتے ہیں۔ اس طرح کارپوریٹ گورننس کمپنی کے مالی استحکام اور سلا متی میں بنیادی کردار ادا کرتی ہے۔ اس سے قبل صغیر الحسن خان (اعزازی ٹریژری آئی سی ایم اے پی اور چیف فنانشل آفیسر سوئی ناردرن نے استقبالیہ دیا ۔

سعید مہدی

مزید :

علاقائی -