عزاداری کا سلسلہ جاری‘ آج شہزادہ قاسمؓ کی یاد میں جلوس برآمدہونگے

عزاداری کا سلسلہ جاری‘ آج شہزادہ قاسمؓ کی یاد میں جلوس برآمدہونگے

  

ملتان، خانقاہ شریف(سٹی رپورٹر، کرائم رپورٹر، نمائندہ پاکستان)نواسۂ رسول، مظلوم کربلاء حضرت امام حسین اور دیگر شہدائے کربلاء کی یاد میں ماتمی جلوسوں کی برآمدگی اور مجالس عزاء کے انعقاد کا سلسلہ جاری ہے۔ آج ضلع بھر میں 7 محرم الحرام کو شہزادہ علی قاسم کی یاد میں مہندی اور علم و ذوالجناح کے(بقیہ نمبر15صفحہ12پر )

کل 73 ماتمی جلوس برآمد کئے جائیں گے جن میں سے 14 کو حساس قرار دیا گیا ہے۔ 23 لائسنسی اور 50 روائتی جلوس شامل ہوں گے۔ ملتان شہر اور گرد ونواح میں 48، مخدوم رشید میں 2، قادر پور راوا ں میں 5، بستی ملوک میں 1، شجاع آباد میں 10 اور جلال پور میں 7 ماتمی جلوس برآمد ہوں گے۔ ملتان شہر کے مختلف علاقوں محلہ مغل پورہ، آستانہ لال کرتی، تھلہ امام والا، بی بی پاک دامن?، تھلہ سادات، ا?ستانہ جال موسیٰ اور دیگر مقامات سے بھی چھوٹے بڑے ماتمی جلوس برا?مد کئے جائیں گے۔ دریں اثناء4 گزشتہ روز 6 محرم الحرام کو شہزادہ علی اصغر کی یاد میں پنگھوڑے کو کل 54 ماتمی جلوس برآمد کئے گئے اور 169 مجالس عزاء برپا کی گئیں۔ آستانہ لال شاہ کچہری روڈ، شاہ رسال، امام بارگاہ شیر شاہ، دربار بی بی پاک دامنہ، ڈبل پھاٹک، آستانہ جال موسیٰ، دربار شاہ اسلام اور دیگر مقامات سے بھی ماتمی جلوس برآمد کئے گئے۔ 12 جلوسوں اور 42 مجالس کو حساس قرار دیا گیا تھا۔ برآمد ہونے والے جلوسوں میں 20 لائسنسی اور 35 روائتی جلوس شامل تھے۔ ملتان شہر اور گرد و نواح میں 33، مخدوم رشید میں 4، شجاع آباد میں 10 اور جلال پور کے علاقوں میں 7 ماتمی جلوس برآمد کئے گئے۔ 7 بجے شام آستانہ لال شاہ کچہری روڈ سے علم کا لائسنسی جلوس برآمد کیا گیا جو گلی امام دین، گنج بازار اور پرانا خانیوال اڈا سے ہوتا ہوا رات ساڑھے دس بجے دربار شاہ شمس پر اختتام پذیر ہو ا۔ بعد نماز عشاء شاہ رسال سے پنگھوڑے کا لائسنسی جلوس برآمد ہو کر براستہ چوک سبیل، گلی شیداں والی رات 12 بجے ا?ستانہ چیتے واہن پر اختتام پذیر ہو ا۔ ایف جی سکول نمبر 1سے ماتمی جلوس برا?مد کیا گیا جس کی قیادت لائسنسداران سید تنویر گیلانی، سید علی اصغر رضوی اور سلیم احمد نے کی۔ وائس پریذیڈنٹ کینٹ بورڈ چوہدری طارق نیاز، ڈی ایس پی کینٹ چوہدری اشفاق گجر، چیف کوارڈینیٹر قومی امن کمیٹی پاکستان غضنفرملک، صدر امن کمیٹی کینٹ کلب عابد خان، راؤ طارق، قاری ابوبکر نقشبندی، ممبران کینٹ بورڈ سعید مونی، یعقوب شیرا، رانا محمداشرف، خواجہ دلشاد احمد، گروپ وارڈن تنظیم شہری دفاع کینٹ محمد یعقوب، باسط توقیر انصاری و ممبران امن کمیٹی جلوس کے ہمراہ سکیورٹی انتظامات اور امن و امان کے حوالہ سے مانیٹرنگ کرتے رہے۔ ماتمی جلوس اپنے مقررہ وقت پر امام بار گاہ کا شانہ شبیر لال کرتی پر اختتام پذیر ہوا۔ امام بارگاہ ماتم سرائے حسنیہ عباس پورہ سے علم وزوالجناح کا ماتمی جلوس برآمد کیا گیا جس کی قیادت امجد رضاکربلائی نے کی۔ حضرت عباس علمدار کی یاد میں ولے چوک محلہ آغا پورہ میں ملک نذیر حسین کی رہائش گاہ سے علم و ذوالجناح کاماتمی جلوس برآمد ہوا جس کی قیادت ملک قاسم رضا، ملک کاظم رضا اور حسنین عباس نے کی جبکہ سید مطلوب حسین بخاری اور عابدہ حسین بخاری سمیت دیگر نے شرکت کی۔ جلوس ولے چوک ،آغا پورہ ،چوک دہلی گیٹ،سبزی بازار کے راستے مرکزی امام بارگاہ کوڑے شاہ پر اختتام ہوا۔ امام بارگاہ سلطان والا سے ماتمی جلوس برآمد کیا گیا جس کی قیادت حسن جاویدانجم اور محمدمظہرنے کی۔ ذاکرقاضی وسیم عباس کی رہائش گاہ محلہ کھوکھرانوالا دولت گیٹ سے برآمدہونے والے علم وذوالجناح ماتمی جلوس کی قیادت سید طالب حسین پرواز،ملک گل حسن،قاضی نسیم عباس نے کی جبکہ احمد عباس،قاضی تقی عباس،قاضی صفدر رضا،قاضی علی رضا،قاضی جلال ،شاہ زہب صدیقی اور دیگر نے شرکت کی۔ علم و ذوالجناح کا جلوس لائسنسدار غلام عباس کے زیراہتمام آستانہ کیڑی پٹولیاں اندرون پاک گیٹ سے برآمد ہوا۔ جلوس کی قیادت مرکزی تنظیم لائسنسداران عزاداری امام حسین کے صدر مہر مزین عباس چاون نے کی۔ جلوس اپنے مقرر کردہ راستے امام بارگاہ کیڑی پٹولیاں ، آستانہ استاد والا سے ہوتا ہوا صرافہ بازار ، النگ پاک سے ہو کر واپس امام بارگاہ کیڑی پٹولیاں پر اختتام پذیر ہوا۔ جلوس کے راستے کو مکمل بند کرکے روف ٹاپ لگایا گیا تھا۔ سکیورٹی کے فول پروف انتظامات دیکھنے میں آئے۔ جلوس کے شرکا میں سٹی صدر امتیاز حسین صدیقی ، نائب صدر نذر عباس چغتائی ، سید حسنین بخاری ، عامر خان بلوچ ، زین کاظمی ، رامس حسین و دیگر شریک تھے۔ اسی طرح امام بارگاہ شیر شاہ، دربار بی بی پاک دامنہ، ڈبل پھاٹک، آستانہ جال موسیٰ، دربار شاہ اسلام اور دیگر مقامات سے بھی چھوٹے بڑے ماتمی جلوس برآمد کئے گئے۔ ملتان شہر اور گرد و نواح میں 135، مخدوم رشید میں 1، قادر پور راواں میں 5، بدھلہ سنت میں 1، بستی ملوک میں 3، شجاع آباد میں 15، راجہ رام میں 2 اور جلال پور میں 9 مجالس عزاء منعقد ہوئیں۔ دریں اثناء ممتازآباد کے علاقہ میں سید قمر حسنین نقوی کی رہائش گاہ پر مجلس عزاء کا انعقاد کیا گیا۔ جس میں سید عاقل رضا زیدی نے خظاب کیااور اھل بیت کی 6محرم الحرام کے واقعات پر روشنی ڈالتے ہوئے ان کے مسائب بیان کیے۔ اس موقع پر سوز خوانی بھی کی گئی جبکہ سید علی منظر زیدی، سید مسعود اختر کاظمی، سید ا?فتاب حیدر نقوی،سید آل رضا کاظمی، سید محمد نقوی سمیت معززین نے شرکت کی۔ علاوہ ازیں محرم الحرام کے سلسلہ میں شہر بھر میں نذر و نیاز تقسیم کرنے اور سبیلیں لگانے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ قدیمی تعزیوں کی تزئین و آرائش اور قبرستانوں میں قبروں کی لیپا پوتی کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ دریں اثناء ضلع ملتان میں آج ضلع ملتان میں آج75جلوس برآمد ہوں گے اور172مجالس منعقد کی جائیں گی جن میں سے 13جلوس اور39مجالس اے کیٹگری کے ہوں گے۔ ملتان پولیس کی جانب سے تمام جلوسوں اور مجالس کے لئے سیکیورٹی پلان ترتیب دیا گیا ہے ۔سٹی پولیس آفیسر ملتان محمد سلیم کی سرپرستی میں تمام ڈویژنل ایس پی صاحبان اپنے اپنے ڈویژن میں محرم سیکیورٹی کی نگرانی کریں گے اور وقتاً فوقتاً ڈیوٹی پر تعینات افسران اور اہلکاروں کو بریف کریں گے ۔ سیکیورٹی پلان کے مطابق گذٹڈ افسران اس تمام سیکیورٹی عمل کی نگرانی کریں گی ۔ ضلع ملتان پولیس کے کل2393پولیس افسران و اہلکار سیکیورٹی ڈیوٹی پر مامور ہوں گے جن میں 38انسپکٹر ،108سب انسپکٹر،120اسسٹنٹ سب انسپکٹرز،48ہیڈ کنسٹیبل اور2062کنسٹیبلان اپنے فرائض انجام دیں گے۔ اس کے علاوہ 10 ریزروز ڈسٹرکٹ پولیس لائن میں ہائی الرٹ رہیں گی جنھیں بوقت ضرورت استعمال کیا جائے گا ۔ ملتان پولیس کے علاوہ پاکستان آرمی اور رینجرز کے اہلکار بھی امن عامہ کے قیام میں اپنا اہم کردار ادا کریں گے نیز489پولیس قومی رضاکاران اور1700ولنٹئیرزبھی معاونت کریں گے ۔ خانقاہ شریف سے نمائندہ پاکستان کیمطابق سات محرم الحرام کو تھانہ کوتوالی کے علاقہ میں 5،تھانہ نوشہرہ جدیدکے علاقہ میں 4، تھانہ اوچ شریف کے علاقہ میں5، تھانہ صدر بہاولپورکے علاقہ میں 3، تھانہ قائم پور ، تھانہ خیرپورٹامیوالی اور تھانہ عباس نگرکے علاقہ میں دو دو، تھانہ بغدادالجدید، تھانہ سول لائنز اور تھانہ ہیڈ راجکاں کے علاقہ میں ایک ایک جلو س برآمد ہوگا۔ضلع بھر کے تھانہ جات کے علاقہ میں62مجالس برپا ہوں گی۔ جلوس اور مجالس پر سیکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے ہیں۔ جلوس اور مجالس میں شامل ہونے والے شرکاء کی مکمل تلاشی لی جاتی ہے اور جلوس کے راستے میں شامل دیگر راستوں کوخاردار تاروں سے بند کردیا جاتاہے۔ خواتین کی تلاشی کے لئے لیڈیز پولیس بھی موجود ہیں۔

مزید :

ملتان صفحہ آخر -