کرک ،ملزمان کی عدم گرفتاری ،انجمن تاجران سراپا احتجاج

کرک ،ملزمان کی عدم گرفتاری ،انجمن تاجران سراپا احتجاج

  

کرک (بیورورپورٹ) انجمن تاجران ،دکانداران کی ملزمان کی عدم گرفتاری ،مقامی پولیس کی ناقص کارکردگی پر عدم اطمینان کا اظہار ،آئی جی پی سے ڈی پی او کے فوری تبادلے کا مطالبہ کرتے ہوئے ملزمان کی گرفتاری تک احتجاج جاری رکھنے کا اعلان کردیا ۔بدھ کے روز مرکزی صدر گل راضی خان کی قیادت میں ایک ہنگامی اجلاس ہوا جس میں مرکزی کابینہ کے موجودہ اور سابقہ تمام عہدیداروں نے شرکت کی اجلاس میں اس امر پر انتہائی غم ،غصے کا اظہار کیا گیا کہ دن دیہاڑے بھتہ خوروں کی بھرے بازار میں سابق صدرپر گرنیڈ حملے سے ڈی پی او خود کو بری الذمہ قرار دے رہے ہیں انہوں نے کہا کہ اگر مقامی پولیس واقعی اس سنگین نوعیت کے واقعے سے بری الذمہ ہے تو امن امان برقرار رکھنے کی ذمہ داری کس کی ہے اجلاس میں آئی جی پی سے فوری ملاقات کا فیصلہ کرتے ہوئے ان سے مطالبہ کیا کہ موجودہ ڈی پی او کو فوری تبدیل کرکے ان کی جگہ کسی دیانتدار افسر کو یہاں بھیجے تاکہ کرک کا مثالی امن دوبارہ قائم ہونے کی راہ ہموار ہوسکے اجلاس میں یہ بھی کہا گیا کہ جب سے اس ڈی پی او نے چارج سنبھالاہے کروڈ آئیل چوری ،موٹر سائیکل چوری اور ڈاکہ زنی کے واقعات میں خطرناک حد تک اضافہ ہوا ہے اجلاس میں دکانداروں کے حقوق کیلئے تاجر برادری کی ایک پلیٹ فارم پر اکھٹا ہونے کو نیک شگون قرار دیتے ہوئے تمام دکانداروں سے متحد رہنے کی اپیل کی گئی اور تمام مارکیٹوں میں سی سی ٹی کیمرے نصب کرنے کا فیصلہ کرتے ہوئے انتظامیہ سے بھی شگی روڈ ،سبزی گلی سڑک اور تحصیل روڈ پر کیمرے نصب کرنے کا مطالبہ کیا گیا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -