بابا فرید الدین گنج شکرؒ کا عرس مبارک، زائرین کیلئے بہشتی دروازہ کھول دیا گیا

بابا فرید الدین گنج شکرؒ کا عرس مبارک، زائرین کیلئے بہشتی دروازہ کھول دیا گیا

  

پاکپتن (نا مہ نگار،این این آئی)پاکپتن میں بابا فرید الدین گنج شکر کے 775 ویں عرس پر بہشتی دروازہ زائرین کے لیے کھول دیا گیا۔ دنیا بھر سے آئے زائرین کی بڑی تعداد نے بہشتی دروازے سے گزرنے سعادت حاصل کی ۔درگاہ بابا فرید الدین گنج شکر کے سالانہ عرس میں روایتی رونق دیکھی گئی۔ سجادہ نشین مودود مسعود چشتی نے بہشتی دروازے کی قفل کشائی کی۔ اس موقع پر آتش بازی کا شاندار مظاہرہ کیا گیا۔سیاسی اور سماجی رہنماؤں سمیت قطار میں لگے ہزاروں زائرین بہشتی دروازے سے گزرے۔ معروف اداکار بہروز سبزواری نے بھی بہشتی دراوزے سے گزرنے والوں میں شامل تھے ۔قفل کشائی کے بعد پیچے تقسیم کرنے کی رسم ادا کی گئی۔ زائرین پیچے حاصل کرنے کے لیے بے قرار نظر آئے۔ جبکہ لنگر کی تقسیم کے نظام پر بھی پر زائرین مطمئن نظر آئے۔عظیم صوفی بزرگ بابا فرید الدین گنج شکر کے عرس کی تقریبات 25 ذوالحج کو شروع ہوئیں اور 10 محرم الحرام کو ختم ہوں گی۔ 10 محرم الحرام کو مزار کو غسل دے کر بہشتی دروازہ آئندہ سال تک کے لیے بند کر دیا جائے گا۔ گزشتہ روز وزیراعلی پنجاب کی کیبنٹ کمیٹی کے اراکین پاکپتن پہنچے اور دربار حضرت بابا فرید کا وزٹ کرنے کے بعد سیکورٹی اقدامات پر اطمنان کا اظہار کیا وزیر اعلی پنجاب میاں شہباز شریف کی کیبنٹ کمیٹی کے اراکین میں صوبائی وزیرقانون رانا ثنااللہ ،صوبائی وزیر انسداد دہشت گردی ایوب گادھی،آئی جی پنجاب پولیس عارف نواز،ایڈیشنل آئی جی فیصل شاہکار ،ایڈیشنل آئی جی سی ٹی ڈی احمد طاہر ،مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے سردار منصب علی ڈوگر ، مقامی مسلم لیگی سرپرست رانا احمد علی اراہیں ،کمیشنر ساہیوال ڈویزن بابر حیات ٹارڑ ،آر پی او ساہیوال طارق رستم چوہان ،ڈپٹی کمیشنر پاکپتن عرفان احمد سندھو ، ڈی پی او پاک پتن اسماعیل الرحمن کھاڑک،چیرمین میونسپل کمیٹی مظفر اقبال چوہدری ،ڈی او انفرمیشن سلمان شاہ اور دیگر محکموں کے افسران شامل تھے ۔ شہر اور دربار کا وزٹ کرنے کے بعد افسران کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر قانون رانا ثنااللہ نے کہا کے دوران عرس سیکورٹی اقدامات کے لیے شہر کی متعدد سڑکوں، گلیوں،مکانوں اور شہریوں کو محصور کر دئیے جانے کا مسلہ سامنے آیا ہے جس سے شہری اور زایرین مشکلات سے دوچار ہیں اس مسئلے کے حل کے لیے کمیٹی بنا دی گئی ہے جو عرس اقدامات کا ازسرنو جایزہ لیکر اپنی رپورٹ پیش کرئے گی یہ کمیٹی عرس کے اختتام پر ہی اپنا کام شروع کر دے گی اور آئندہ کے لیے اس کا مثبت سدباب کر دیا جائے گا ۔

بہشتی دروازہ

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -