سائنسدانوں نے ان میں سے ایک جڑواں بھائی کو ایک سال کیلئے خلاءمیں بھیج دیا تاکہ جان سکیں کہ اس سے انسان پر کیا فرق پڑتا ہے، اب یہ واپس آیا اور معائنہ کیا تو یہ دیکھ کر ہر سائنسدان دنگ رہ گیا کہ۔۔۔

سائنسدانوں نے ان میں سے ایک جڑواں بھائی کو ایک سال کیلئے خلاءمیں بھیج دیا ...
سائنسدانوں نے ان میں سے ایک جڑواں بھائی کو ایک سال کیلئے خلاءمیں بھیج دیا تاکہ جان سکیں کہ اس سے انسان پر کیا فرق پڑتا ہے، اب یہ واپس آیا اور معائنہ کیا تو یہ دیکھ کر ہر سائنسدان دنگ رہ گیا کہ۔۔۔

  

واشنگٹن(نیوز ڈیسک)خلاءکے راز جاننے کے لئے تو امریکی ادارے ناسا کے بے شمار خلاباز اب تک خلاءکا سفر کر چکے ہیں البتہ گزشتہ سال پہلی بار دو جڑواں بھائیوں میں سے ایک کو محض اس لئے خلاءمیں بھیجا گیا تا کہ خلاءکی زندگی کے انسانوں پر اثرات کے بارے میں بھی کچھ جانا جا سکے۔

دی انڈیپینڈنٹ کی رپورٹ کے مطابق سکاٹ کیلی نامی اس خلانور دکا جڑواں بھائی مارک کیلی زمین پر ہی موجود رہا۔ سائنسدانوں نے سکاٹ کیلی کو اس لئے خلاءمیں بھیجا تاکہ اس کے جینز میں ہونے والی تبدیلیوں کا اس کے بھائی کے جیز کے ساتھ موازنہ کیا جاسکے کیونکہ جڑواں ہونے کی وجہ سے دونوں کے جینز کا موزانہ کرکے تبدیلیوں کا پتہ چلانا آسان تھا۔

گاڑی کی کھڑکی سے نکل خر مستیاں کرتے اس آدمی کے ساتھ اگلے ہی لمحے کیا ہوگیا؟ ایسا خوفناک ترین انجام کہ دیکھ کر آپ کبھی غلطی سے بھی ایسی حرکت نہ کریں گے

خلاءمیں تقریباً ایک سال گزارنے کے بعد سکاٹ کیلی مارچ میں واپس آئے۔ ان کے معائنے کے بعد تیار کی گئی ابتدائی رپورٹ کے مطابق ایک سال تک خلاءمیں گزارنے کے نتیجے میں ان کے جڑواں بھائی کی نسبت ان کے جینز کے ٹیلو میئر لمبے ہوچکے ہیں۔ ٹیلو میئر کروموسوم کے سروں پر موجود خول ہوتے ہیں جو انہیں محفوظ رکھتے ہیں۔ خلاءسے واپسی کے بعد سکاٹ کے جینز کے ٹیلو میئر کی جسامت پھر سے کم ہونا شروع ہوگئی ہے۔

سائنسدانوں کیلئے یہ بات انتہائی حیران کن ہے کیونکہ کسی انسان کے ٹیلو میئرز لمبے ہونے کا مطلب یہ ہوتا ہے کہ اسے بڑھاپا دیر سے آئے گا اور عمر نسبتاً طویل ہوگی۔ خلاءمیں ایک سال گزارنے کے دوران ٹیلومیئرز لمبے ہونے کا بظاہر یہ مطلب نظر آتا ہے کہ خلاءمیں انسان کی زندگی زمین پر اس کی زندگی کی نسبت طویل ہو گی۔

”تو میری بہن کیساتھ۔۔۔“ بھارتی وزیر کے بھتیجے کی ’دھلائی‘ کرنے والی یہ لڑکی کون ہے اور اسے کیوں مار رہی ہے؟ وجہ جان کر آپ اس لڑکی کی ہمت کی داد دینے پرمجبور ہو جائیں گے

سائنسدانوں نے سکاٹ کے جینز میں دو لاکھ سے زائد ایسے آر این اے مالیکیول بھی دریافت کئے ہیں جن میں تبدیلیاں آ چکی ہیں۔ ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ بھی انتہائی اہم بات ہے کیونکہ اس سے یہ ظاہر ہوتا ہے کہ خلاءمیں جینز کی تبدیلی کا عمل زمین پر ہونے والی جینز کی تبدیلیوں سے مختلف ہے۔ انسان کے لئے اس عمل کے دورس نتائج کیا ہوسکتے ہیں، سائنسدان اس کے بارے میں ابھی کچھ کہنے سے گریز کر رہے ہیں۔

سائنسدانوں کا یہ بھی کہنا ہے کہ اس تحقیق کے نتائج کو پوری طرح سمجھنے اور مرتب کرنے میں ابھی کچھ عرصہ لگے گا اور امید کی جا رہی ہے کہ آنے والے چند ماہ کے دوران ایک تفصیلی رپورٹ شائع کی جائے گی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -