نجی شعبہ سی پیک کے مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھائے‘ہارون شریف

نجی شعبہ سی پیک کے مواقع سے بھرپور فائدہ اٹھائے‘ہارون شریف

اسلام آباد ( آن لائن ) اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے ایمرجنگ پاکستان انڈر سی پیک پالیسی فریم ورک کے موضوع پر ایک سمینار کا انعقاد کیا ۔ بورڈ آف انوسٹمنٹ کے نامزد چیئرمین ہارون شریف اس موقع پر مہمان خصوصی تھے۔ چینی سفارتخانے کے پولیٹکل کونسلر جینگ ہان، چیمبرکے صدر شیخ عامر وحید، سینئر نائب صدر محمد نوید ملک، نائب صدر نثار مرزا اور فاؤنڈر گروپ کے چیئرمین زبیر احمد ملک سمیت تاجر برادری کی ایک بڑی تعداد نے سمینار میں شرکت کی۔ سمینار سے خطاب کرتے ہوئے بورڈ آف انوسٹمنٹ کے نامزد چیئرمین ہارون شریف نے کہا کہ سی پیک منصوبہ پاک چین دوستی کی عمدہ مثال ہے اور پاکستان کی معیشت کیلئے بہت اہمیت کا حامل ہے کیونکہ اس سے پاکستان میں کاروبار و سرمایہ کاری کے بے شمار نئے مواقع پیدا ہوں گے۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ نجی شعبہ سی پیک منصوبے میں حکومت کا پارٹنر بنے اور اس منصوبے میں پائے جانے والے جوائنٹ وینچرز و سرمایہ کاری کے مواقعوں سے بھرپور فائدہ اٹھائے۔ انہوں نے کہا کہ سی پیک میں مقامی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو لیول پلیئنگ فیلڈ فراہم کی جائے گی اور کسی کے ساتھ امتیاز نہیں ہو گا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کی معیشت کو سٹریکچرل چیلنجز کا سامنا ہے اور موجودہ حکومت ان مسائل کو حل کرنے کیلئے پرعزم ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان میں انوسٹمنٹ ٹو جی ڈی پی کی شرح 15فیصد سے کم ہے جبکہ معیشت کی بہتر ترقی کیلئے اس شرح کو دگنا کرنا ہو گا۔ انہوں نے اس بات پر زور دیا کہ نجی شعبہ آگے بڑھے اور معیشت کی ترقی میں اپنا بھرپور کردار ادا کرے۔ انہوں نے کہا کہ وہ سرمایہ کاری بورڈ میں جدید ٹیکنالوجی کو متعارف کرائیں گے جس سے ملکی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو پاکستان کی معیشت میں سرمایہ کاری کے مواقع تلاش کرنے میں سہولت ہو گی۔انہوں نے چیمبر کی طرف سے سی پیک منصوبے پر سمینار منعقد کرنے کے اقدام کو سراہا اور کہا کہ اس طرح کے سمینارز سے حکومت اور نجی شعبے کو ایک دوسرے کا نقطہ نظر جاننے اور مسائل کا متفقہ حل تلاش کرنے کا بہتر موقع ملتا ہے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے اسلام آباد چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر شیخ عامر وحید نے کہا کہ نجی شعبے کو سی پیک منصوبے سے کافی توقعات وابستہ ہیں اور ضرورت اس بات کی ہے کہ حکومت سی پیک منصوبے کے تحت بننے والے اسپیشل اکنامک زونز میں مقامی و غیر ملکی سرمایہ کاروں کو جوائنٹ وینچرز و سرمایہ کاری کے مساوی مواقع فراہم کرے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت سی پیک منصوبے کے بارے میں نجی شعبے کو پوری طرح اعتماد میں لے اور ان کو اس منصوبے کی مکمل معلومات فراہم کی جائیں تا کہ نجی شعبہ ممکنہ کاروباری مواقعوں سے بہتر استفادہ حاصل کر سکے۔ انہوں نے کہا کہ چیمبرمیں CPEC Facilitation Cell قائم کر دیا گیا ہے جس کیلئے سرمایہ کاری بورڈ کا قریبی تعاون درکار ہے تا کہ مشترکہ کوششوں سے سی پیک میں پائے جانے والے تمام ممکنہ کاروباری مواقعوں سے نجی شعبے کو بہتر طور پر آگاہ کیا جا سکے۔انہوں نے کہا کہ چیمبر سی پیک کے بارے میں بیرونی ممالک میں بھی سمینار منعقد کرنا چاہتا ہے لہذا سرمایہ کاری بورڈ ان کوششوں میں چیمبر کے ساتھ تعاون کرے۔سمینار سے خطاب کرتے ہوئے چین کے سفارتخانے کے پولیٹکل کونسلر جینگ ہان نے کہا کہ سی پیک منصوبے کی تکمیل سے پاکستان میں ترقی و خوشحالی آئے گی۔ انہوں نے کہا کہ چین کے بہت سے سرمایہ کار سی پیک میں شرکت کرنے میں دلچسپی رکھتے ہیں لہذا پاکستان کی تاجر برادری ان کو کھلے دل سے قبول کرے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان جلد ہی چین کا دورہ کریں گے اور اس سلسلے میں چین کا سفارتخانہ بھرپور تیاری کر رہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان کے دورے کے دوران اسپیشل اکنامک زونز، تجارت، سماجی ترقی، زراعت، ڈیموں کی تعمیر، اقتصادی و تکنیکی تعاون اور انفارمیشن و کمیونیکیشن ٹیکنالوجی سمیت دیگر شعبوں میں تعاون مضبوط بنانے پر بات چیت کی جائے گی۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کا نجی شعبہ چین کے تجربے سے فائدہ اٹھا کر بہتر ترقی کر سکتا ہے۔ چیمبر کے سینئر نائب صدر محمد نوید ملک، نائب صدر نثار مرزا، چیمبر کی گوادر کمیٹی کے چیئرمین نعیم پراچہ، خالد محمود، باصر داؤد، بابر چوہدری اور دیگر نے بھی اپنے خیالات کا اظہار کیا اور سی پیک منصوبے کی بروقت تکمیل کیلئے مثبت تجاویز دیں۔ #/s#

*****

مزید : کامرس