خوشحال خٹک ایکسپریس کو دوسرا حادثہ

خوشحال خٹک ایکسپریس کو دوسرا حادثہ

کراچی سے پشاور جانے والی خوشحال خان خٹک ایکسپریس کو سیہون شریف کے قریب حادثہ پیش آگیا اور گاڑی کی دس بوگیاں پٹڑی سے اتر گئیں، شیخ رشید کے وزارت ریلوے کا قلم دان سنبھالنے سے اب تک یہ دوسرا بڑا حادثہ ہے جو خوشحال خان خٹک کو پیش آیا اگرچہ کراچی لاہور ریل ٹریفک متاثر نہیں ہوئی کہ اس گاڑی کا روٹ مختلف ہے تاہم حادثہ والی ریلوے لائن پر گاڑیوں کی آمدوفت بری طرح متاثر ہوئی۔ وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید نے یہ وزارت اس دعوے کے ساتھ قبول کی تھی کہ وہ ایک سال میں نقصان ختم کرا دیں گے اور یورپ کی طرز پر گاڑیوں کی حالت بھی سنوار دیں گے لیکن حادثہ ہوتے ہی ان کا یوٹرن سامنے آ جاتا ہے، حالانکہ ماضی میں اگر کوئی متاثر ہوتا اور حادثہ ہوتا یہی شیخ رشید وزیر ریلوے سے استعفیٰ مانگتے تھے، اب ان کو اپنے رویے پر غور کرنا چاہئے اور خود ہی مستعفی ہو کر قوم کی دعائیں لینا ہوں گی، لیکن یہ آرزو حسرت ہی رہے گی۔

مزید : رائے /اداریہ