ضلع پشاور کا 11ارب27کروڑ71لاکھ سے زائد کا سر پلس بجٹ منظور

ضلع پشاور کا 11ارب27کروڑ71لاکھ سے زائد کا سر پلس بجٹ منظور

پشاور (سٹی رپورٹر) ضلع پشاورکی ضلع پشاور کا مالی سال 2018-19ء 11 ارب 27کروڑ71لاکھ 43 ہزار450 روپے سرپلس بجٹ اپوزیشن اور حکومتی ممبرانے متفقہ طور پر منظورکرلیاہے۔ جس میں ترقیاتی اخراجات کا تخمینہ 70 کروڑ، غیر ترقیاتی اخراجات کا 10ارب 48کروڑ11لاکھ 33ہزار820 روپے، ڈھائی کروڑ روپے کی لاگت سے دلہ ذاک روڈ پر آئس نشے سے بحالی سنٹر کی تعمیر، ایک کروڑ سرکاری سکولوں کے ٹاپ طلبہ کے لیپ ٹاپ سکیم، 8 کروڑ سے بی ایچ یو اور رورل ہیلتھ سنٹر کے لئے ویکسین اور ادویات کی خریداری کے لئے مختص، 34 کروڑ روپے کی لاگت سے نمکمنڈی کارپاکنگ پلازہ کی تعمیر، ساڑھے 5کروڑ کی لاگت سے نمکمنڈی فوڈ سٹریٹ مکمل کرلی ہے،4 آر ایچ سی اور10 بی ایچ یو سولر لائزیشن کردی ہے، 5کروڑ روپے پر میونسپل انٹر کالج برائے خواتین کالج کی نئی بلڈنگ کی تعمیر کے لئے مختص کردی ہیں۔ ضلع کونسل پشاور کا اجلاس زیر صدارت کنونیئر سیدقاسم علی شاہ منعقد ہوا۔ بجٹ پر تیسرے روز بحث کرتے ہوئے اپوزیشن لیڈر سعید محمد ظاہر ایڈوکیٹ، اے این پی ممبر شیخ کریم جان، پیپلزپارٹی ممبر جمیل خان، جماعت اسلامی ممبر خورشید عالم، سرور دین، پی ٹی آئی ممبران رضاء محمد ، اخترعلی محمد ابراہیم نے ترقیای بجٹ بڑھانے کے لئے ضلع ناظم سے صوبائی حکومت سے خصوصی گرانٹ لینے کا مطالبہ کیاہے جبکہ ضلع ناظم محمد عاصم خان کو اپوزیشن اور حکومتی ممبران کو برابری بنیاد پر ترقیاتی فنڈ دینے پر خراج تحسین پیش کرتے ہوئے شو آف ہینڈ سے متفقہ طور پر بجٹ منظور کرلیاہے۔ بجٹ میں لوکل فنڈ سے 64کروڑ 59لاکھ 86 ہزار 96 روپے، ضلع کونسل گرانٹ 8کروڑ1لاکھ 934 روپے آمدنی متوقع ہیں ۔ لوکل فنڈ سے مرمت وترقیاتی اخراجات کی مد میں 5 کروڑ87 لاکھ79ہزار563 روپے، غیر ترقیاتی اخراجات 57کروڑ 58 لاکھ50 ہزار420 روپے مختص کردی ہیں جبکہ دیگر محکموں کے لئے گرانٹ ایک کروڑ مختص کردی اور لوکل فنڈ سے ٹوٹل اخراجات 64کروڑ46لاکھ29ہزار983 روپے بنتی ہیں۔ ضلع ناظم نے کہاکہ سٹی ڈسٹرکٹ گورنمٹ نے دور حاضر کی مختلف شعبہ جات میں جدید سہولیات کی فراہمی کوعوام کیلئے اولین ترجیح رکھی، ضلعی اداروں کو فعال بنانے اور ضلعی حکومت کی آمدن بڑھانے کیلئے اپنی توانائی صرف کی۔ ضلعی حکومت کی ترجیحات کو صوبائی حکومت کے ساتھ ہر فوم پر اٹھایا اور اپنے حق کیلئے آواز بلند کی۔ انہوں نے کہاکہ بجٹ میں پشاورکی تعمیر و ترقی اور عوام کے مسائل حل کرنے اور جاری منصوبہ جات کو پایہ تکمیل تک پہنچانے پر خصوصی توجہ دی گئی ہے۔ جس کے بعد کنونیئر سید قاسم علی شاہ کونسل اجلاس غیر معینہ مدت کے لئے ملتوی کردیاہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر