اکاؤنٹس تفصیلات کی عدم فراہمی پر 42جماعتوں کو انتخابی نشان نہیں ملیں گے ، الیکشن کمیشن

اکاؤنٹس تفصیلات کی عدم فراہمی پر 42جماعتوں کو انتخابی نشان نہیں ملیں گے ، ...

 اسلام اباد(سٹاف رپورٹر)الیکشن کمیشن نے اکاؤنٹس کی تفصیلات جمع نہ کرانے والی 42سیاسی جماعتوں کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے انہیں ضمنی انتخابات کیلئے انتخابی نشانات آلاٹ نہ کرنے کا فیصلہ کر لیا ہے ،سیاسی جماعتوں کو 20ستمبر تک سالانہ حسابات جمع نہ کرانے کے حوالے سے شوکاز نوٹس جاری کیا گیا تھا تاہم کسی بھی سیاسی جماعت نے شوکاز نوٹس کا جواب نہیں دیا ہے ،حسابات جمع نہ کرانے والوں میں پشتونخوا ہ ملی عوامی پارٹی ،بی این پی عوامی ،سنی تحریک اور آل پاکستان مسلم لیگ سمیت کئی سیاسی جماعتیں شامل ہیں ۔الیکشن کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والے لسٹ کے مطابق کمیشن کے پاس رجسٹرڈ 42سیاسی جماعتوں نے تاحال اپنے سالانہ حسابات کی تفصیلات الیکشن کمیشن کے پاس جمع نہیں کرائی ہیں جو کہ الیکشن ایکٹ 2017کی شق 210کے تحت تمام سیاسی جماعتوں پر لازم ہے کمیشن کی جانب سے جاری ہونے والے لسٹ کے مطابق پشتونخوا ملی عوامی پارٹی ،عام لوگ پارٹی پاکستان ،آل پاکستان مینارٹی الائنس،آل پاکستان مسلم لیگ ،آل پاکستان تحریک،عوامی جسٹس پارٹی پاکستان،عوامی ورکرز پارٹی ،پی این پی عوامی،فرنٹ نیشنل پارٹی،ہزارہ ڈیموکریٹک پارٹی ،جمعیت علماء اسلام نظریاتی،جمعیت علماء اسلام سمیع الحق ،جموٹ قومی موومنٹ ،جنت پاکستان پارٹی ،مہاجر قومی موومنٹ پاکستان ،محب وطن نوجوان ،متحدہ قبائل پارٹی ،نیشنل پیس کونسل پارٹی ،پاکستان امن پارٹی ،پاکستان سیٹزن موومنٹ ،پاکستان کنزرویٹو پارٹی ،پاکستان کسان اتحاد ،پاکستان مسلم لیگ کونسل ،پاکستان مسلم لیگ فنکشنل ،پاکستان مسلم لیگ جونیجو،پاکستان مسلم لیگ ضیاء،پاکستان مسلم لیگ شیر بنگال ،پاکستان نیشنل مسلم لیگ ،پاکستان راہ حق پارٹی ،پاکستان سنی تحریک ،پاکستان تحریک انصاف نظریاتی ،پاکستان ویلفیر پارٹی ،پاسبان پاکستان ،پیپلزمسلم لیگ پاکستان ،روشن پاکستان لیگ،سنی اتحاد کونسل ،سنی تحریک ،تحریک تبدیلی نظام پاکستان ،تحریک صوبہ ہزارہ پاکستان ،تحریک جوانان پاکستان شامل ہیں الیکشن کمیشن کی جانب سے 13ستمبر کو ان سیاسی جماعتوں کو اپنے سالانہ حسابات کے گوشوارے جمع کرانے کیلئے شوکاز نوٹس جمع کرایا گیا تاہم ان سیاسی جماعتوں نے شوکاز نوٹس کا جواب نہیں دیا جس پر الیکشن کمیشن نے ان سیاسی جماعتوں کے خلاف کاروائی کرنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت ان سیاسی جماعتوں کو 14اکتوبر کو ہونے والے ضمنی انتخابات کیلئے پارٹی کا انتخابی نشان الاٹ نہیں کیا جائے کمیشن کے ذرائع کے مطابق اگر اس کے باوجود بھی ان سیاسی جماعتوں نے اپنے سالانہ حسابات جمع نہ کرائے تو انہیں الیکشن کمیشن کی فہرست سے بھی خارج کرنے کا فیصلہ کیا جا سکتا ہے ۔

مزید : صفحہ اول