چکوال،پولیس نے ڈکیتی کی واردات کو چوری میں بدل دیا

چکوال،پولیس نے ڈکیتی کی واردات کو چوری میں بدل دیا

چکوال(ڈسٹرکٹ رپورٹر)تبدیلی کا نعرہ لگانے والی حکومت کی پولیس نے ڈکیتی کی واردات کو چوری میں بدل دیا۔متاثرین دربدر تفتیشی افسراور ایس ایچ او نے رپورٹ درج کر کے متاثرین کے مخالفین کو کھلی چھوٹ دے کر اپنے تبادلے کروالیے ۔تفصیلات کے مطابق نواحی موضع چھمبی کے رہائشی توفیق احمد ، محمد افضل ، ظفر اقبال ، اکرم اور دیگر نے اخبار نویسوں کو بتایاکہ 14اور 15اگست کی درمیانی شب ہماری ہمشیرہ ، سردار بیگم زوجہ خوشحال خان اپنے بیٹی کے ہمراہ گھر میں سو رہی تھی کہ رات اڑھائی بجے کے قریب تین نقاب پوش مسلح ڈاکو گھر کی دیوار پھلانگ کر بر آمدے کی گرل کاٹی اور کمرے میں داخل ہوگئے ۔ مدعیان نے بتایا کہ پہلے ہماری بہن اور بھانجی کو پسٹل کے بٹ مار کر زخمی کیااور پھر اسلحہ کی نوک پر انہیں یرغمال بنالیا۔سیف اور صندوق کے تالے توڑ کر 45لاکھ مالیت کے زیورات ، سات لاکھ تیس ہزار روپے نقدی کے علاوہ قیمتی موبائل اور دیگر اشیاء لوٹ کر فرار ہو گئے ۔ توفیق احمد نے مزید بتایا کہ ہم نے پولیس چو آسیدن شاہ کو حقائق پر مبنی ڈکیتی اور تشدد کی درخواست دی مگر تفتیشی پرویز اور ایس ایچ او محمد افضل نے ہماری درخواست کے برعکس ڈکیتی کی بجائے چوری کی ایف آئی آر درج کر کے ملزمان کی غیر قانونی پشت پناہی کی۔آر پی او راولپنڈی اور ڈی پی او چکوال تھانہ چو آ سیدن شاہ پولیس کے اختیارات سے ناجائز تجاوز اور ملزمان کوغیر قانونی فائدہ پہنچانے پر ان کے خلاف قانونی کاروائی کی جائے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر