محبوبہ مفتی کی صاحبزادی بھی کشمیریوں پر ہونے والے بھارتی مظالم پر بلبلا اٹھیں،ایسی بات کہہ دی کہ نریندرامودی کو کہیں منہ دکھانے کے لائق نہ چھوڑا

محبوبہ مفتی کی صاحبزادی بھی کشمیریوں پر ہونے والے بھارتی مظالم پر بلبلا ...
محبوبہ مفتی کی صاحبزادی بھی کشمیریوں پر ہونے والے بھارتی مظالم پر بلبلا اٹھیں،ایسی بات کہہ دی کہ نریندرامودی کو کہیں منہ دکھانے کے لائق نہ چھوڑا

  


سری نگر(ڈیلی پاکستان آن لائن)مقبوضہ کشمیر کی سابق کٹھ پتلی وزیر اعلیٰ محبوبہ مفتی کی صاحبزادی التجا  مفتی بھی کشمیریوں کی حمایت کے لئے میدان میں آ گئیں،عالمی رہنماؤں سے خطے میں پابندیوں کو ختم کروانےاور ان کی جدو جہد آزادی کی حمایت کرنے کی اپیل کر دی ہے۔

تفصیلات کے مطابق مائیکرو بلاگنگ ویب سائٹ پر اپنے ویڈیو پیغام میں محبوبہ مفتی کی جواں سالہ صاحبزادی التجا مفتی نےہندوستان کی جانب سے آئین کے آرٹیکل 370 کو منسوخ  کرنے  کے   بعد  معاشی ، انسانی اور صحت  پر پڑنے والے نفسیاتی  اثرات اور بحران سے  پیدا ہونے پر  خطے کے عوام سے  عالمی رہنماؤں  تک اپنی آواز پہنچانے کی اپیل کی ہے۔ 

انہوں نے اپنے  ویڈیو پیغام  میں کہا ہے کہ اس وحشیانہ اور غیر انسانی ناکہ بندی کے نفاذ کو 54 دن گزر چکے ہیں,جموں کشمیر پر اندھیریا چھایا ہوا ہےاور  لوگوں کو  معاشی ، انسانی ، نفسیاتی اور صحت  جیسے  مسائل اور  بحران کا سامنا کرنا پڑرہا ہے جبکہ جموں و  کشمیر میں مقامی میڈیا اور پریس  کو  حکومت کے مسلسل  دباؤ  اور سنسرشپ  کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ  13 سال سے کم عمر لڑکوں کو آدھی رات کو ہندوستانی افواج  کے  گھروں میں گھس کر بستروں  سے اٹھانے کی بھی اطلاعات  موجود ہیں، اس خطے میں ہزاروں افراد جمع  کردہ اپنی پونجی   ختم کرچکے  ہیں  اور دو ماہ سے  بچے سکول نہیں جاسکے ہیں،عالمی رہنماؤں کو تجارت اور اسٹریٹجیک   کے چنگل سے باہر  نکل کر اصل حقائق کی طرف دیکھنے کی ضرورت ہے،اب وقت آگیا ہے کہ  تمام لوگ  دلوں میں کشمیر سے متعلق  اپنے نظریات  کو حقیقت کا روپ دینے کے  لیے یکجا ہو جائیں ورنہ ہمارےنوجوان انسانیت کی بھلائی پراعتماد کھو بیٹھیں گے۔

مزید : انسانی حقوق /علاقائی /آزاد کشمیر /مظفرآباد


loading...