پاکستان قومی خلائی پروگرام کے اپنے وژن کو اجاگر کرتا ہے: سفیر آفتاب احمد کھوکھر

پاکستان قومی خلائی پروگرام کے اپنے وژن کو اجاگر کرتا ہے: سفیر آفتاب احمد ...
پاکستان قومی خلائی پروگرام کے اپنے وژن کو اجاگر کرتا ہے: سفیر آفتاب احمد کھوکھر

  

ویانا(اکرم باجوہ) سفیر پاکستان ویانا آسٹریا آفتاب احمد کھوکھر نے انٹرنیشنل کمیٹی آن گلوبل نیوی گیشن سیٹلائٹ سسٹم (آئی سی جی) کے 15 ویں اجلاس سے خطاب کیا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کے قومی خلائی پروگرام کا محور ہمیشہ پائیدار سماجی و اقتصادی ترقی کا حصول رہا ہے۔انہوں نے مزید کہا کہ پاکستان بیرونی خلا پر تمام پانچ بنیادی کثیرالجہتی معاہدوں کا ایک ریاستی فریق کے طور پر ، اپنی بیرونی خلائی سرگرمیوں کو پرامن شفاف اور محفوظ طریقے سے متعلقہ بین الاقوامی اصولوں کے مطابق انجام دیتا ہے۔ 

 سفیر آفتاب احمد کھوکھر نے کہا کہ دیگر ترقی پذیر ممالک کی طرح پاکستان بھی مختلف شعبوں میں شہری منصوبہ بندی ، ٹرانسپورٹ ، آبی وسائل کے انتظام ، زراعت ، صحت عامہ ، ڈیزاسٹر مینجمنٹ کے ساتھ ساتھ ماحولیاتی آلودگی اور موسمیاتی تبدیلیوں میں خلائی ٹیکنالوجی کو استعمال کرنے کی کوشش کر رہا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ حال ہی میں خلائی 2030 کے ایجنڈے کو 64 ویں سیشن میں بیرونی خلا کے پرامن استعمال کے بارے میں اپنانے سے ترقی پذیر ممالک کی جگہ کو بطور ڈرائیور استعمال کرنے کی کوششوں کو مزید تقویت ملے گی۔سفیر آفتاب احمد کھوکھر نے کہا کہ گلوبل نیوی گیشن سیٹلائٹ سسٹم (GNSS) ٹیکنالوجیز ہمارے معاشروں اور معیشتوں کا لازمی حصہ بن چکی ہیں۔ انہوں نے یہ بھی کہا کہ عہدوں کو درست اور قابل اعتماد طریقے سے تلاش کرنے کی صلاحیت جدید معیشتوں میں ایک ناگزیر ضرورت ہے جس میں ماحولیات ، قدرتی وسائل کا انتظام ، آفات کی وارننگ اور ہنگامی ردعمل کے وسیع اثرات ہیں۔انہوں نے کہا کہ سیٹلائٹ نیوی گیشن سسٹم سماجی و معاشی نمو اور پائیدار ترقی میں ناگزیر کردار ادا کر رہے ہیں اس لیے پاکستان نے معیشت کے ہزاروں شعبوں میں جی این ایس ایس ایپلی کیشنز کو بہت اہمیت دی۔

مزید :

تارکین پاکستان -