کراچی,انٹر بورڈ امتحانی پرچوں کی مشین سے چیکنگ کا منصوبہ کھٹائی میں پڑ گیا

کراچی,انٹر بورڈ امتحانی پرچوں کی مشین سے چیکنگ کا منصوبہ کھٹائی میں پڑ گیا
کراچی,انٹر بورڈ امتحانی پرچوں کی مشین سے چیکنگ کا منصوبہ کھٹائی میں پڑ گیا

  

 کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن ) کراچی اعلی ثانوی تعلیمی بورڈ کے تحت انٹرمیڈیٹ کے امتحانی نتائج کی تیاری کے سلسلے میں "مشین کوڈیفیکیش" کا منصوبہ ناکام ہوگیا ہے،بورڈ انتظامیہ امتحانی کاپیوں کی مشین کے ذریعے کوڈیفیکیش کرانے میں بری طرح ناکام ہوگئی ہے۔

نجی ٹی وی "ایکسپریس نیوز "کے مطابق پری انجینیئرنگ اور پری میڈیکل کے سیکنڈ ایئر  کی لاکھوں امتحانی کاپیوں کی جانچ سے قبل ماضی کی طرح دستی کوڈیفیکیش ہی کرالی گئی ہے۔ہاتھ سے کی گئی( مینوول) کوڈیفیکیش کے بعد امتحانی کاپیاں جانچ کے لیے اساتذہ کے حوالے کی گئی ہیں جس کے سبب جدت کے دعوے دھرے رہ گئے ہیں۔ یاد رہے کہ اعلی ثانوی تعلیمی بورڈ کراچی نے ایک  کروڑ روپے سے زائد رقم سے 2 کوڈیفیکیش مشینیں خریدی تھیں جبکہ امتحانی کاپیوں کی جانچ کے لیے "او ایم آر" ( آپٹیکل مارک ریڈنگ) کے تحت چیکنگ مشینیں بھی خریدی گئی تھیں۔

اس خریداری کے بعد چیئرمین بورڈ پروفیسر سعید الدین نے امتحانات کے سلسلے میں منعقدہ ایک پریس کانفرنس میں اس منصوبے کا باقاعدہ اعلان کرتے ہوئے واضح کیا تھا کہ اس سال 2022 کی امتحانی کاپیوں کی کوڈیفیکیش انھی مشینوں کے ذریعے کرائی جائے گی،

مزید :

قومی -علاقائی -سندھ -کراچی -