چیئرمین سینیٹ کے دفتر کے باہر کوریڈور بند کرنے کا معاملہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی پہنچ گیا

چیئرمین سینیٹ کے دفتر کے باہر کوریڈور بند کرنے کا معاملہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی ...
چیئرمین سینیٹ کے دفتر کے باہر کوریڈور بند کرنے کا معاملہ پبلک اکاؤنٹس کمیٹی پہنچ گیا

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) چیئرمین سینیٹ کے آفس  کے باہر کوریڈور بند کرنے کا معاملہ پبلک اکاؤنٹس آفس پہنچ گیا ، سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے بتایا کہ چیئرمین سینیٹ کے دفتر کے باہر کوریڈور کو بند کیا گیا  ہے جس پر  سینیٹرز کو بھی اعتراضات ہیں۔

چیئرمین  نور عالم خان کی زیر صدارت پبلک اکاؤنٹس کمیٹی کا اجلاس ہوا  ، اجلاس میں چیئرمین سینیٹ کے دفتر کے باہر کوریڈور بند کرنے کے معاملے پر بحث ہوئی ،نور عالم خان نے کہا کہ  پچھلے چیئرمین پی اے سی نے پارلیمنٹ کے کوریڈورز کھولنے کی ہدایت کی تھی، پی اے سی کو جو جواب آیا وہ پی اے سی کی بے عزتی ہے۔ سیکرٹری سینیٹ نے جواب دیا کہ  مجھے اس خط پر افسوس ہے۔

چیئرمین پی اے سی نے کہا کہ کوریڈورز کو کوئی بھی بند نہیں کرسکتا،  دفاتر کے اندر جو کرنا ہے کرلیں،  اگر ہم قانون پر عمل نہیں کرینگے تو دنیا مذاق اڑائے گی۔

سینیٹر سلیم مانڈوی والا نے کہا کہ  سیکرٹری  سینیٹ اس کے ذمہ دار نہیں ہیں،  جس ٹائم یہ ہورہا تھا میں ڈپٹی چیئرمین سینیٹ تھا،  اس وقت بھی ہم نے مخالفت کی تھی۔ چیئرمین پی اے سی  نور عالم خان  نے کوریڈورز کھولنے کی ہدایت کردی اور کہا کہ  اگر کوئی غیر قانونی رکاوٹ ڈالے ان کیخلاف کارروائی کی جائے۔

چیئرمین پبلک اکاؤنٹس کمیٹی نے سیکرٹری قومی اسمبلی سے مکالمہ کرتے ہوئے کہا کہ میں نے آپ کو خطوط لکھے آپ نے جواب نہیں دیا، آپ نے ہر صوبے کا کوٹہ کس قانون کے تحت ختم کیا۔کتنے لوگ باہر دوروں پر گئے اس کی تفصیل فراہم کردیں، حالیہ دورے پر سپیکر کے ساتھ کتنے لوگ گئے؟،  میڈیا میں 25 لوگوں کی بات سامنے آئی۔

سیکرٹری قومی اسمبلی نے کہا کہ 25 لوگ نہیں گئے صرف 5 گئے تھے، چیئرمین سینیٹ نے کہا کہ  جن میڈیا اداروں نے غلط  کیا ان کو وضاحت دینی چاہیے۔

مزید :

اہم خبریں -قومی -