پشاور کے یونیورسٹی روڈ پر خود کش حملہ ،دوافغان اہلکاروں سمیت 10 افراد جاں بحق،45زخمی

پشاور کے یونیورسٹی روڈ پر خود کش حملہ ،دوافغان اہلکاروں سمیت 10 افراد جاں ...
پشاور کے یونیورسٹی روڈ پر خود کش حملہ ،دوافغان اہلکاروں سمیت 10 افراد جاں بحق،45زخمی

  

پشاور (مانیٹرنگ ڈیسک) یونیورسٹی روڈ پر مبینہ خود کش حملے میںسابق افغان وزیراعظم قاضی امین کے بیٹے سمیت دس افراد جاں بحق اور45زخمی ہوگئے جنہیں خیبرٹیچنگ ہسپتال منتقل کردیاگیاہے ۔پولیس کے مطابق بم موٹر سائیکل میں نصب کیاگیاتھا جس میں پانچ سے چھ کلوگرام بارودی مواد استعمال کیاگیا۔ایس پی کینٹ محمد فیصل کے مطابق جائے دھماکہ سے کچھ اعضاءملے ہیں اور شبہ ہے کہ حملہ خودکش تھا ، ابتدائی طورپر آٹھ افراد جاں بحق ہوگئے ہیں۔عینی شاہدین کے مطابق بس سٹاپ پر ہونیوالے دھماکے کے وقت مسافر بس میں سوار ہورہے تھے ۔ہسپتال ذرائع کے مطابق مزید دوزخمی دم توڑ گئے ہیں جبکہ تین زخمیوں کی حالت تشویشناک ہے ۔ کمشنرآفس ذرائع کے مطابق دھماکے سے چند لمحے قبل جائے دھماکہ سے کمشنر صاحبزادہ انیس اور این اے تین سے آزاد امیدوارحیدرخان کی گاڑی گزری ۔پولیس کے مطابق دھماکے میں افغان مشاورتی کونسل کے رکن قاضی ہلال احمد اوراُن کے کزن ادریس شامل ہیں جو کسی تقریب کے دعوت نامے دینے کیلئے جائے دھماکہ پرموجود تھے اور وہ افغان قونصلیٹ کے اہلکار ہیں ۔

مزید : پشاور /اہم خبریں