امریکہ اور ایران کے خرچے پرکرزئی نے افغانیوں کو ”حرام خور “کردیا

امریکہ اور ایران کے خرچے پرکرزئی نے افغانیوں کو ”حرام خور “کردیا
امریکہ اور ایران کے خرچے پرکرزئی نے افغانیوں کو ”حرام خور “کردیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک)افغان صدر حامد کرزئی امریکہ اور ایران کے مفادات کے تحفظ کیلئے دونوں ممالک سے پیسے لیتے رہے جس نے افغانیوں کو بھی ”بے ایمان“ کردیا۔ ایک امریکی اخبار نے انکشاف کیاہے کہ سی آئی اے گزشتہ 10 سالوں سے امریکی مفادات کے تحفظ کیلئے افغان صدر حامد کرزئی کو ماہانہ بنیادوں پر لاکھوں ڈالر دیتی رہی جبکہ ایرانی حکومت اپنے مفادات کے حصول کیلئے افغانستان کو پیسے دیتی رہی جوجنگ زدہ صوبے میں کرپشن کی بڑی وجہ بنی ۔نیویارک ٹائمز میں کے مطابق’گھوسٹ منی‘ کہی جانے والی یہ رقم حامد کرزئی کے ذریعے افغان نیشنل سیکیورٹی کونسل کو دی جاتی تھی جو افغانستان میں امریکی مفادات کے لئے استعمال کی جاتی تھی لیکن رقم کی تقسیم فائدے کی بجائے افغانستان میں کرپشن اور بد امنی کی سب سے بڑی وجہ بن گئی ہے۔ جریدے نے دعویٰ کیا ہے کہ سی آئی اے کے علاوہ ایران بھی افغان حکومت کو سالانہ پیسے دیتا ہے تاکہ افغان حکومت ایران کے مفادات کا تحفظ کرے۔دوسری جانب سی آئی اے یا امریکی حکومت کی جانب سے اس خبر کی تصدیق یا تردید سے بھی گریز کیاگیا ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس