صنعت کار کسی بھی ملک کی معیشت شہہ رگ ہوتے ہیں: رﺅف صدیقی

صنعت کار کسی بھی ملک کی معیشت شہہ رگ ہوتے ہیں: رﺅف صدیقی

                   کراچی(اکنامک رپورٹر)صوبائی وزیرِ صنعت وتجارت رﺅف صدیقی نے کہا ہے کہ سائٹ صنعتی علاقے میں تجاوزات کے خلاف آپریشن ،پانی چوری کے سد باب کے لئے اقدامات ،سائٹ صنعتی علاقوں میں سڑکوں کی تعمیر و مرمت کے لئے 27کروڑ روپے کے اجرا اور سائٹ ایسو سی ایشن میں کمانڈ اینڈ کنٹرول سسٹم کے قیام پرمیںگورنر سندھ ڈاکٹر عشر ت العباد خان ،وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ اورکور کمانڈر کراچی لفٹنینٹ جنرل سجاد غنی کو خراج تحسین پیش کر تا ہوں، ہم صنعت کار کسی بھی ملک کی معیشت شہہ رگ ہوتے ہیں، کراچی کے صنعت کاروں کو سہولتیں فراہم کردی جائیں تو ہمیں ورلڈ بینک اور ٓئی ایم ایف کی ضرورت بھی نہ پڑے، وزارت کا قلمدارن سنبھالنے کے بعد مےری پوری کوشش ہوگی کہ صنعتکاروں کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیے جائیں انھوں نے سائٹ کراچی میں سڑکوں کی تعمیر کے معیار پر عدم اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے ایک دفعہ پھر تنبیہ کی ہے کہ ناقص میٹریل کے استعمال پر سائٹ کے چیف انجینئر ،اسسٹنٹ انجینئر ،متعلقہ کنسلسٹنٹ اور ٹھیکیدارکوجیل بھیج دیا جائیگا یہ بات اُنہوں نے سائٹ ایسو سی ایشن کے دورے کے مو قع پر صنعتکاروں کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔

رﺅف صدیقی نے کہا کہ سائٹ کی جنرل باڈی کے الیکشن کے حوالے سے معاملات کا خود جائزہ لوں گا میری رائے ہے کہ جنرل باڈی میں صنعتکاروں کی اکثریت ہونی چاہیے اس سلسلے میں قانونی ماہرین سے سائٹ کے چارٹر کے مطابق تجاویز دی جائینگی تاکہ قوانین میں ضروری تبدیلی لائی جاسکے ،سائٹ صنعتی علاقے میں پانی اور گیس کے مسائل کے حل کے لئے کل ( بروزمنگل)میرے دفتر میں علیحدہ علیحدہ اجلاس ہوں گے جس میں صنعتکار اپنی تجاویز پیش کریں گے اُنہوں نے کہا کہ سندھ کے تمام صنعتی اسٹیٹس میں سکیورٹی وال کی تعمیر کے لئے موجودہ بجٹ میں فندز مختص کرنے کی سمری تیار کی جائے، میرے نزدیک تین شعبے انتہائی مقدس ہیں جن میں معلم،طب اور تجارت شامل ہیں یہ وجہ ہے میں صنعتکاروں اور تاجروں کی بے حد عزت کر تا ہوں صنعتکاروں کی بہتری کے لئے پہلے بھی اُ ن کے ساتھ تھا اب بھی اُ ن کے ساتھ ہوں ،ملکی معیشت کی ترقی کے لئے صنعتکاروں کو مستحکم بنانا بے حد ضروری ہے، رﺅف صدیقی نے کہا کہ میں نے صنعتکاروںسے اپنی ذات کے لئے کوئی پھوٹی کوڑی نہیں لی جس کے گواہ صنعتکار خود ہیں اس کے باجود مجھ پر بہتان تراشی کی گئی ،نا انصافی میرے لئے ناقابل برداشت ہے ۔رﺅف صدیقی نے کہا کہ صنعتی علاقے میں مسائل کے حل کے لئے سب کو مل جل کر کام کر نا ہوگامشترکہ کوششوں سے ہی مثبت نتائج برآمد ہوں گے،سائٹ صنعتی علاقے میں پانی چوری کے واقعات روکنے کا ذمہ دار واٹر بورڈ ہے واٹر بورڈ کو اپنی ذامہ داریاں مناسب طریقے سے انجام دینی ہوں گی رﺅف صدیقی نے کہا کہ سانحہ بلدیہ کے وقت سب سے پہلے جائے وقوع پر پہنچا تھا اپنی آنکھوں کے سامنے زندہ جلتے ہوئے دیکھا لیکن بے اختیار تھا اسی وجہ سے وزارت سے استعفیٰ دیاتھا،اب بھی ان اختیارات کے لئے کوششیں جاری رکھوں گااس طرح کے سانحات سے مستقبل میں بچنے کے لئے اداروں پر مشتمل کمیٹی بنائیں گے جس کے لئے اجلاس جلد ہوگا۔ میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صوبائی وزیر صنعت وتجارت رﺅف صدیقی نے کہا کہ ملکی دفاعی ادارے ہم سب کے لئے قابل احترام ہیں ،کسی ایک واقع کو جوازبنا کر فوج اور آئی ایس آئی پر تنقید تکلیف دہ عمل ہے ،ایک سوال کے جواب میں اُنہوں نے کہا کہ بجلی چوروں کے خلاف کاروائی ضرور ہو نی چاہیے لیکن کراچی کی بجلی کاٹنے کے حوالے سے عابد شیر علی کابیان نا مناسب ہے۔

مزید : کامرس