سنی تحریک کا پریس کلب کے باہر پاک فوج کے حق میں مظاہرہ

سنی تحریک کا پریس کلب کے باہر پاک فوج کے حق میں مظاہرہ

لاہور(وقائع نگار)پاکستان سُنی تحریک کے زیراہتمام پاک فوج اورسکیورٹی اداروں کی کردارکشی کیخلاف پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ ہوا۔مظاہرین نے بینرزاورکتبے اُٹھارکھے تھے جن پرافواج ِ پاکستان اورحساس اداروں کے حق میں نعرے درج تھے مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے علامہ مجاہدعبدالرسول خان نے کہا کہ قومی سلامتی کے ادارے ملک کاقیمتی اثاثہ ہیں آزادی ¿ اظہارکی آڑمیں دفاعی اداروں کے وقارپرکوئی سمجھوتہ نہیں کیاجاسکتاحکومت فوج کیخلافبے بنیادپراپیگنڈے کرنے والوں کیخلافقانونی کاروائی کرے اداروں کاتصادم ملک وقوم کے مفاد میں نہیں،قومی سیاسی جماعتیں اداروں کے درمیان تناﺅ کوجلدختم کروانے کیلئے اپنامثبت کرداراداکریںانہوں نے کہا کہ معروفصحافی حامد میر پر حملہ قابل مذمت ہے مگر اس حملے کی آڑمیں ملکی سلامتی کے اداروں کو بد نام کرنا ملک دشمن قوتوں کے عزائم پورے کرنے کے مترادفہے صحافیوں پر قاتلانہ حملہ آزادی ¿صحافت پرقدغن لگانے کی گھناو¿نی سازش ہے جمہوریت میں استحکام لانے کےلئے آزاد عدلیہ اور آزاد میڈیا کو پروان چڑھاناہوگا ملک نازک ترین دور سے گذررہا ہے ،پاک فوج کئی محاذوں پر ملک کے دفاع کی جنگ لڑ رہی ہے اِن حالات میں پاک فوج کے افسروں اور جوانوں کا مورال گرانا ملک دشمنی ہے ملک میں دہشتگردی کے حالیہ واقعات حکمرانوں کے منہ پر طمانچہ ہیںحکمرانوں کو دہشت گردوں سے مذاکرات کی بجائے ان کے خلافسخت آپریشن کرنا چاہیے۔اس موقع پر لاہور سٹی کے صدر سردار محمد طاہر ڈوگر ،شیخ محمد نواز قادری و دیگر نے کہا کہ پوری قوم دہشتگردی کے خلاف جہاد میں پاک فوج کے ساتھ ہے قومی سلامتی کے ضامن دفاعی ادارے آئی ایس آئی کے خلافہرزہ سرائی ناقابل قبول ہے اس موقع پر مفتی محمد حشیب عطاری ،علامہ شیر محمد سیالوی،قاری سیف اللہ نقشبندی، علامہ رب نواز جلالی، علامہ شفاقت قادری ودیگر بھی موجود تھے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1