مئی میں اہم شخصیات کے اغوا سمیت پنجاب بھر میں دہشتگردی کا خطرہ ۔فول پروف سکیورٹی کے احکامات جاری

مئی میں اہم شخصیات کے اغوا سمیت پنجاب بھر میں دہشتگردی کا خطرہ ۔فول پروف ...

                                      لا ہو ر (شعےب بھٹی )ماہ مئی میں دہشت گردی کے خطرے اور اہم سرکاری شخصیات کو اغواءکرنے کے خدشہ کے پیش نظر حکومت پنجاب نے نیشنل کرائسسزمینجمنٹ سیل کی رپورٹ پر لاہور سمیت صوبے بھر کے بڑے شہروں میں قائم ملکی و غیر ملکی تعلیمی اداروں، انسانی حقوق کے مراکز، جیلوں، سرکاری دفاتر اور دیگر اہم حساس مقامات کی سکیورٹی کے فول پروف انتظامات کی ہدایات جاری کر دی ہیں،اس ضمن میں انتظامات مکمل کرکے محکمہ داخلہ کورپورٹ 72گھنٹوں میں بذریعہ فیکس جمع کروانا کا بھی حکم دیا گیا ہے۔تفصیلات کے مطابق نیشنل کرائسسز مینجمنٹ سیل کی جانب سے حکومت پنجاب کو جاری مراسلہ میں خبر دار کیا ہے کہ صوبے کے تمام ریجنل پولیس افسز، کمشنرز، ڈی پی اوز اور ڈی سی اوزکو اپنے اپنے اضلاع کی پولیس لائنز، جیلوں، سرکاری دفاتر، ملکی و غیر ملکی این جی اوز کے دفاتر، سرکاری افسروں کی رہائش گاہوں پرممکنہ دہشت گردی کا خطرہ ہے جبکہ اسکے ساتھ ساتھ اہم سرکاری افسران کو بھی اغواءکیا جاسکتا ہے ۔مراسلے میں مزید کہا گیا ہے کہ اس ضمن میں تمام اہم مقامات سمیت دیگر جگہوں کی سکیورٹی کے انتظامات مکمل کرکے رپورٹس72 گھنٹوں میں محکمہ داخلہ کو فیکس کو جمع کروائی جائے اسکے ساتھ ساتھ ذرائع کا کہنا ہے کہ ایک وفاقی ادارے نے خدشہ ظاہر کیا ہے کہ پنجاب کے غیر ملکی امداد سے چلنے والے تمام تعلیمی اداروں میں دہشت گردی کے خدشات ہیں اس ضمن میں ان اداروں کے سربراہوں کو اپنی اداروں کی سکیورٹی کو بہتر اور فول پروف کرنیکا بھی حکم دیا گیا ہے جس میں سکولز اور کالجز کی پارکنگ کو بھی محفوظ بنانے کے احکامات شامل ہیں ۔محکمہ داخلہ نے اپنے مراسلے میں وزارت داخلہ کے حکم نامے کی کاپی بھی ساتھ لف کی ہے جس میں خدشہ ظاہر کیا گیا ہے جس میں کہا گیا ہے کہ پنجاب میں ماہ مئی میں دہشت گردی کے خدشات ہیں۔

خطرہ

مزید : صفحہ آخر