خرچہ مانگنے آئی خاتون کو طلاق مل گئی، بیٹے نے باپ کا گریبان پکڑ لیا

خرچہ مانگنے آئی خاتون کو طلاق مل گئی، بیٹے نے باپ کا گریبان پکڑ لیا
خرچہ مانگنے آئی خاتون کو طلاق مل گئی، بیٹے نے باپ کا گریبان پکڑ لیا

  

لاہور (نیوزڈیسک) فیملی سول جج کی عدالت میں خرچہ کا دعویٰ کرنیوالی خاتون کو پیشی کے موقع پر شوہر وحید نے عدالت کے باہر طلاق دیدی، طلاق کا سنتے ہی پروین بے ہوش ہوکر گر پڑی جبکہ بیٹے علیم نے طلاق دینے پر باپ کو گریبان سے پکڑ لیا۔ تفصیلات کے مطابق فیملی سول جج کی عدالت میں شاہدہ کی پروین نے اپنے دو بچوں کے خرچ کے حصول کیلئے دعویٰ دائر کررکھا ہے جس میں اس نے کہا کہ شہر نے دوسری شادی کرلی اور بچوں کو خرچہ نہیں دے رہا جس کی وجہ سے بچے سخت پریشان ہیں اور ان کی پڑھائی بھی نہیں ہوپارہی، گھر کا چولہا بھی چل نہیں پارہا۔ عدالت نے دعویٰ پر گزشتہ روز وحید کو طلب کیا تھا۔ وحید عدالت پیش ہونے کیلئے آیا تو اس نے عدالت میں جانے سے پہلے برآمدے میں ہی پروین کو طلاق دیدی جسے سن کر پروین صدمے سے بے ہوش ہوگئی۔ اس موقع پر 15 سالہ بیٹا علیم والدہ کو بے ہوشی کی حالت میں نہ دیکھ سکا اور اس نے باپ کا گریبان پکڑ لیا، تاہم اس موقع پر سائلین اور وکلاءنے بیچ بچاﺅ کرایا جس پر وحید ایوان عدل سے نکل جانے میں کامیاب ہوگیا۔ عدالت نے دوران سماعت وحید کے وکیل کو حکم دیا کہ عدالت میں دونوں بچوں کا خرچہ دس ہزار روپے ماہانہ جمع کرایا جائے۔ ہوش آنے کے بعد پروین نے کہا کہ وہ طلاق لینا نہیں چاہتی تھی اگر اس نے طلاق لینی ہوتی تو بہت پہلے لے لیتی اس کو طلاق دینے کا مقصد خرچے سے بچنا ہے جو وہ بچ نہیں سکتا۔ پروین روتی ہوئی بیٹے کے ساتھ ایوان عدل سے چلی گئی۔

مزید : لاہور