عیسائی ننوں کے ایک گروہ نے ایسا شرمناک ترین کام شروع کردیا کہ دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا

عیسائی ننوں کے ایک گروہ نے ایسا شرمناک ترین کام شروع کردیا کہ دنیا میں ہنگامہ ...
عیسائی ننوں کے ایک گروہ نے ایسا شرمناک ترین کام شروع کردیا کہ دنیا میں ہنگامہ برپاہوگیا

  

نیویارک(نیوزڈیسک) ایک راہباﺅں کے گروہ نے صدر ٹرمپ کو منہ چڑھاتے ہوئے پوست(بھنگ )کی کاشت شروع کررکھی ہے اور ساتھ یہ چیلنج بھی دیا ہے کہ وہ پوست کی کاشت کو مزید بڑھائیں گی۔ تفصیلات کے مطابق امریکی ریاست کیلی فورنیا میں یہ راہبائیں بھنگ کی کاشت کررہی ہیں اور اپنی اس چیز کی وجہ سے خواتین کو اس کے ذریعے طاقت دینا چاہ رہی ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ وہ صدر ٹرمپ سے نہیں ڈرتیں اور بھنگ کی کاشت کو مزید بڑھا رہی ہیں۔ برطانوی اخبار ”میٹرو“ کا کہنا ہے کہ سال گذشتہ انہوں نے ساڑھے سات لاکھ ڈالر(75کروڑ روپے)بھنگ کی کاشت سے کمائے تھے۔ صدر ٹرمپ کی انتظامیہ اور اٹارنی جنرل جیف سیشنز بھنگ کی کاشت کے ناقد ہیں اور ان کی کوشش ہے کہ اسے امریکہ میں کاشت کی اجازت نہ دی جائے۔ لیکن ان راہباﺅں کا کہنا ہے کہ صدر ٹرمپ کی مخالفت نے انہیں نئی طاقت دی ہے اور وہ اس کام کو مزید بڑھاتے ہوئے کینیڈاتک لے جانے کا اعلان کیا ہے۔ اس وقت یہ راہبائیں آن لائن بزنس کے ذریعے بھنگ کی بھاری مقدار کینیڈا بھی بھیج رہی ہیں۔ سسٹر کیٹ کا کہنا ہے کہ کچھ لوگوں نے ہمیں تنقید کا نشانہ بھی بنایا لیکن ہم اس سے ڈرنے والی نہیں ہیں۔ ”ہم بھنگ سے ایسی ادویات بنارہے ہیں جو قدرتی طور پر لوگوں کی بیماریاں دور کرنے کی طاقت رکھتی ہیں۔“اس کا کہنا ہے کہ اس طریقے سے وہ خواتین کو آزاد کرکے انہیں مالی استحکام دینے کا ارادہ رکھتی ہیں۔امریکہ کی 20سے زائد ریاستوں میں بھنگ کی کاشت کی اجازت ہے اور ریاست کیلیفورنیا نے نومبر 2016ءمیں اس کی اجازت دی تھی۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -