وزیر اعظم استعفٰی دیکر گھر جائیں ، قوم نواز شریف کا سماجی بائیکاٹ کرے : عمران خان

وزیر اعظم استعفٰی دیکر گھر جائیں ، قوم نواز شریف کا سماجی بائیکاٹ کرے : عمران ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر228مانیٹرنگ ڈیسک 228 ایجنسیاں)پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان نے غیر قانونی اثاثے رکھنے پر پوری قوم سے وزیراعظم نوازشریف کے سماجی بائیکاٹ کی اپیل کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ نوازشریف اقتدار کا جواز کھو چکے ہیں ، نوازشریف استعفی دے کرگھر جائیںآپپر کیس چل رہا ہے آپ کرسی سے چپک کر کیوں بیٹھے ہو، نوازشریف کوجندل نہیں بچا سکے گا، انہوں نے اعلان کیا کہ پاناما کیس میں 10ارب روپے کی پیشکش کے معاملے پر عدالت نے بلایا تو پیشکش کرنے والے کا نام عدالت میں بتا دوں گا ، عدالت کو اس شخص کو تحفظ فراہم کرنے کی ضمانت دینا ہوگی، نام سامنے آئے تو شریف خاندان کے رشتہ دار بھی پھنس جائیں گے ،جو بھی کرپٹ ہے وہ نوازشریف کے ساتھ کھڑا ہے۔ اسے معلوم ہے اس کی بھی باری آسکتی ہے ،کیا کوئی پاناما شریف کا ایمان دیکھ کر مسلمان ہو سکتا ہے ،شریف برادران قرآن پاک پر حلف دیں کہ زندگی میں کبھی رشوت نہیں دی تو میں انہیں مان جاؤں گا ، مقدمے میں گھسیٹا گیا تو مجھے 10ارب روپے ہرجانے کی رقم اسحاق ڈار، نوازشریف اور شہباز شریف کے بیٹوں سے لینا پڑے گی کیونکہ یہی ارب پتی رہ گئے ہیں جو کہ انتہائی دولت مند ہیں ، سجن جندل کے بیان اور ڈان لیکس میں کوئی فرق نہیں ، نوازشریف پاناما لیکس میں پھنس چکے ہیں ،قومیں میٹرو اور پل بنانے سے نہیں بنتی دیانتداری سے قومیں ابھرتی ہیں،منزل قریب ہے اورجلسے جاری رہیں گے ، 9مئی کوسیالکوٹ میں جلسہ کرینگے ۔ شکرپڑیاں کے قریب پریڈ ایو نیو میں پارٹی کے زیر اہتمام جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے ہوئے ، عمران خان نے کہا کہ شہبازشریف اور نوازشریف قرآن پاک پر ہاتھ رکھ کر بتا دیں کہ انہوں نے آج تک کسی کو رشوت نہیں دی تو میں مان جاؤں گا کہ یہ لوگ بے قصور ہیں مجھے شک ہے کہ کہیں قرآن پاک پر ہاتھ رکھ کر کہہ ہی نہ دیں میں تو اربوں روپے کا ہرجانہ بھی ادا نہیں کرسکوں گا ۔انہوں نے کہا کہ میں عوام کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں کیونکہ آپ لوگوں کی وجہ سے نوازشریف عدالت میں پھنس چکا ہے ، آپ لوگ باہر نہ نکلتے تو پاناما لیکس کو بھی پاکستانی بھول جاتے اور اربوں روپے یونہی نگل لئے جاتے ۔مسلمان ایک عظیم قوم تھے ، پاکستان واحد ملک ہے جو اسلام کے نام سے بنا ہے ، مسلمانوں نے جو ریاست بنائی اس میں لیدر کا صادق اور امین ہونا ضروری تھا ، کرپٹ آدمی کو اگر ملک کے خزانوں کا رکھوالا بنا دیں تو پھر یہی حال ہوگا جو آج پاکستان کا ہورہا ہے، ہمارے نبیؐ نے ساری قوم کو سچی اور ایمانداری قوم بنادیا ، قومیں میٹرواور روڈ بنانے سے نہیں اچھے کردار سے بنتی ہیں ، مسلمانوں نے اپنے کردار کے بل پر دنیا کی سپرپاوروں کو بھی شکست دے دی تھی ۔ عمران خان نے کہا کہ پانامہ کیس کے فیصلے میں دو ججوں نے نوازشریف کونا اہل کردیا اور تین ججز نے کہا کہ جھوٹے تو یہ ہیں مگر اس کی مزید تحقیقات کر لو اور پھر 60دن بعد ان کو نااہل کر دیں گے مگر موٹو گینگ مٹھائیاں بانٹ رہا رتھا، قطری خط کو پانچوں ججز نے یکسر مسترد کردیا ور کہا کہ یہ خط جھوٹا ہے اس کی کوئی قانونی حیثیت نہیں ہے ۔ نوازشریف نے سجن جندال کو بلالیا پاکستان میں مگر نوازشریف پر واضح کردوں کہ یہ سجن جندال تمہیں نہیں بچا سکتا ، ہمارا وزیراعظم اپنے ملک کو فوج کو بدنام کرنے میں آگے آگے ہے کیا ڈان لیکس میں یہی نہیں کہا گیا کہ ہم بھارت سے دوستی کرنا چاہتے ہیں مگر پاکستانی فوج دوستی نہیں کرنا چاہتی ۔عمران خان نے کہا کہ بھارت کشمیر میں ظلم کررہا ہے اوربلوچستان میں بھی دھماکے کرارہا ہے مجھے جہاں بھی موقع ملے گا میں کشمریوں کے حقوق کی بات کروں گا ، کشمیریوں کو یقین دلاتا ہوں کہ پورا پاکستان آپ کے ساتھ ہے ۔ مسلم لیگ ن والوں سے جلسہ تو ہوتا نہیں انہوں نے سوچا کہ پی ایس ایل کا فائنل لاہور میں کروا لو اور ٹکٹ اپنے لوگوں میں بانٹ دو تاکہ اپنے لوگ خوش ہو جائیں ، کوئٹہ گلیڈیئٹرز بڑی محنت سے فائنل میں پہنچی مگر ان کے اچھے کھلاڑی لاہور نہیں آئے اور انہوں نے پھٹیچر اور ریلو کٹا ٹائپ کھلاڑی بلا لئے جن کی وجہ سے وہ ہار گئے جنوبی کوریا کے عوام کی طرح جلسے کریں گے اور تب تک نہیں رکیں گے جب تک وزیراعظم استعفیٰ نہیں دے دیتا ، میں 5مئی کو نوشہرہ اور 7مئی کو سیالکوٹ میں جلسہ کروں گا اور وزیراعظم کے پکڑے جانے تک جلسے جاری رہیں گے ۔ عمران خان نے کہا ہے کہ10 ارب روپے کی پیش کش کے دعوے پر اب بھی قائم ہوں۔مجھے خوشی ہو گی کہ آپ مجھے عدالت لے جائیں۔10 ارب روپے کی رشوت کی پیشکش کرنے والے شخص کا نام عدالت میں بتاؤں گا۔پاکستانی تاجر کے تحفظ کیلئے عدالت سے درخواست بھی کروں گا،مجھے منانے کیلئے اس شخص کو2 ارب روپے کی پیشکش کی گئی تھی۔ کشمیر۔ ایسا پاکستان بنانا چاہتا ہوں جہاں بیرون ملک ہرے پاسپورٹ کی الگ لائن نہ بنانی پڑے۔ مسلم لیگی وزیروں نے بہت کوشش کی کہ پاناما کیس بھول جائیں مگر عوام نہیں بھولیں گے ۔ نوازشریف کاوزیراعظم رہنا مشکل ہوجائے گا، استعفیٰ دیے بغیر جان نہیں چھوٹے گی۔ میں اپن اس دعویٰ پر قائم ہوں کہ مجھے دس ارب روپے کی پیشکش کی گئی تھی پیغام لانے والے کو بھی 2ارب کی پیشکش کی گئی تھی ۔ سنا ہے شہبازشریف نے دعویٰ کیا ہے اس نے کوئی ہرجانہ کیا ہے ۔ عمران خان نے کہا کہ بڑا اچھا ہوگااگر آپ مجھے عدالت میں لے کر جائیں میں اس لیے پیغام لانے والے کا نام نہیں لے رہاکیونکہ مجھے پتہ ہے کہ آپ سیاستدان نہیں آپ مافیا ہیں آپ اس کا کاروبار بند کردیں گے ۔ آپ اس کے خلاف انتقامی کارروائی کریں اس پر جھوٹا کیس بنائی گے ۔ جس طرح آپ نے ساری تحریک انصاف کی قیادت پر جھوٹی ایف آئی آر لکھوائی ہیں۔ اگر آپ نے مجھے اشتہاری اور دہشتگرد بنا دیا تو اس بے چارے کا کیا ہوگااس لیے میں فی حال اس کا نام نہیں لے رہا ۔ اس لیے میں کہتا ہوں کہ مجھے عدالت میں بلاؤ میں اس کا نام بھی لوں گااور عدالت سے کہوں گااسے تحفظ دیں ۔ عدالت کو یہ بھی بتاؤں گاکہ دبئی میں آپ کو کون آدمی بیٹھا ہے جس نے پیشکش کی تھی مجھے لگتا ہے اس میں آپ کے اور بھی رشتہ دار پھنس جائیں گے تاکہ یہ ظالم جو 30سال سے ظلم کررہے ہیں جھوٹے کیسز بنانا لوگوں کے کاروبار بند کروانا لیبرٹی میں الفتح کے نام سے کاروبار کرنے والا جب تحریک انصاف میں آیا تو اگلے دن اس مالک کا انہوں نے سٹور بند کرا دیا ۔ ایسا لگ رہا ہے کہ یہ 30سال سے لوگوں کو رشوت دے رہے ہیں ۔ کیاہم بھول گئے ہیں چھانگامانگاسیاستدانوں کو بھیڑ بکریوں کی طرح نیلام کیا گیا پھر انہیں چھانگا مانگا کے ریسٹ ہاؤس میں انہیں بھیڑ بکریوں کی طرح بند کیا گیا ۔ کیا آپ نے ان کو بے نظیر کے خلا ف ہونے کی رشوت نہیں دی کیا آپ نے اصغر خان کیس میں مہران بنک سے پیسے نہیں لیے کیا آپ نے سابق آرمی چیف جنرل آصف نوازکو نتھیا گلی کے گورنر ہاؤس میں اس کو رشوت کے طور پر بی ایم ڈبلیو نہیں دی ۔ یہ بات اس کے شجاع نواز نے اپنی کتاب میں لکھا ہے ۔

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک228 ایجنسیاں ) جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید نے کہاہے کہ2میں فیل ہوگئے،3میں سپلی آگئی اور کہا جاتا ہے کہ پپو پاس ہوگیا، میں عمران خان کا ساتھی ہوں اور یہ ہی آخری امید ہیں، گھی سیدھی انگلی سے نہ نکلا تو خان صاحب کی قیادت میں ٹیڑھی انگلی سے نکالیں گے۔ آج ملک میں وزیرخارجہ ہوتا تواسمبلی میں جنرل راحیل شریف کی تعیناتی پربحث ہوتی جبکہ طارق فاطمی، پرویز رشید اور راو تحسین کو بھی قربانی کی بھینٹ چڑھایا جا رہا ہے۔پانامہ کیس کی سماعت کے دوران دو ججوں نے کہا وزیراعظم صادق اور امین نہیں جبکہ تین نے کہا کہ انہیں 60دن کاوقت دیا جائے،پانچ ججوں نے کہا کہ قطری خط فراڈ ہے ، کاغذات فضول ہیں،پیسہ کہاں گیا؟،یہی نہیں ججوں نے فیصلے میں میرے متعلق بہت اچھے جملے استعمال کیا حالانکہ میں ایک چھوٹا سا وکیل ہوں۔انہوں نے کہا کہ میں پاکستانی وکلا کو دعوت دیتا ہوں کہ وہ 6 مئی کو سڑکوں پر نکلیں اورپورا پاکستان ان کا تاریخی استقبال کرے گا۔وکلا بھی جانتے ہیں کہ عوام واقعی تبدیلی چاہتے ہیں اور قوم نے عمران خان سے امید لگائی ہے۔ ریاض پیر زادہ نے چوروں کو بے نقاب کیااور بھی لوگ بے نقاب ہوں گے ،میں نواز شریف سے سوال کرتا ہوں کہ کہاں گئی نندی پور کی بجلی اور بھاشا ڈیم؟میں زندگی کے اس موڑ پر نظام سے علم بغاوت کرنا چاہتا ہوں، مرنا چاہتا ہوں یا مارنا چاہتا ہوں۔اگر گھی سیدھی انگلی سے نہیں نکلا تو کوئی بات نہیں میں خان صاحب کی قیاد ت میں ٹیڑھی انگلی سے نکال کر دکھاوں گا،اس وقت ساری قوم کا ایک ہی نعرہ ہے کہ ’’گو نواز گو‘‘۔تحریک انصاف کے مرکزی رہنما شاہ محمودقریشی نے کہاہے کہ وزیراعظم کو ساٹھ دن کی مہلت دیتے ہیں،کسان ،مزدور ،وکلاء اورطالب علم حکمرانوں کو گھربھیجنے کی تحریک میں شامل ہوجائیں،جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے شاہ محمود قریشی نے کہاکہ حکمران عوامی طاقت سے محروم ہوچکے ہیں، پانامہ کیس پر انہوں نے جیسے جیسے فیصلہ پڑھا ان کی خوشی مایوسی میں بدل گئی اورمٹھائیاں کم ہوگئیں جب حکمران کرپٹ ہوتے ہیں تو غربت میں اضافہ ہوتا ہے انہوں نے کہاکہ پنجاب کے کسانوں کی سرکاری ریٹ پر گندم نہیں خریدی جارہی کیا ٹیکسٹائل لومز،مزدور، وکلاء اس پرخاموش رہیں گے عوام لوڈشیڈنگ سے بیزارہوچکے ہیں ان کی وعدہ خلافیوں کے باوجود کیاعوام خاموش رہیں گے قانون کی کچہری اپنا فیصلہ دے چکی ہے عدالت میں ان کے ثبوتوں کومسترد کردیا ہے اب عوام کی کچہری سے پوچھتا ہوں کہ کیا عوام کی کچہری ان کو بے گناہ یاگناہ گارسمجھتی ہے یہ فیصلہ عوام نے دینا ہے اگر عوام سمجھتے ہیں کہ یہ گناہ گار ہیں تو کمرباندھ کرعمرا ن خا ن کی تحریک میں شامل ہوجائیں یہ تحریک پاکستان کی تحریک ہے یہ تحریک حکمرانوں کو گھربھیجنے کی تحریک ہے۔تحریک انصاف کے سیکرٹری جنرل جہانگیرخان ترین نے کہاہے کہ پانامہ کیس میں ایسے ثبوت دیئے ہیں کہ دنیا حیران رہ گئی ہے، دو ججوں نے وزیراعظم کومجرم باقی تین نے کہا ملزم ہے مزید تفتیش کی جائے جے آئی ٹی کی کارروائی میں حصہ ڈالیں گے بندکمرے میں نہیں ہونے دینگے۔جلسہ عام سے خطاب کرتے ہوئے جہانگیرخان ترین نے کہاکہ آخرکارنوازشریف کی تلاشی سپریم کورٹ نے شروع کی ہم نے لاک ڈاؤن ختم کیا چھ ماہ مقدمہ چلتارہا عمران خان ہرپیشی پر گئے ہم نے ایسے ثبوت دیئے کہ دنیا حیران ہوگئی کوئی سوچ بھی نہیں سکتاتھا کہ ہم ایسے ثبوت دینگے دوججوں نے کہاکہ وزیراعظم مجرم ہے اور تین نے کہاکہ یہ ملزم ہے اس کی مزید تفتیش کریں تمام ججز نے قطری خط کو فراڈ قراردیاجسٹس اعجازالاحسن نے قطری خط کے بارے میں کہاکہ یہ بوگس ہے ان کاسارا کچھ قطری خط تھا کیونکہ ان کی ہرچیز میں قطر قطر تھا ججز نے قطری خط کو باہرنکال دیا گیارہ سوالات کے جواب جے آئی ٹی نے لیکرآنے ہیں سات دن جے آئی ٹی کی کارروائی دیکھیں گے جے آئی ٹی کی کارروائی میں حصہ ڈالیں گے بند کمرے میں تحقیقات نہیں ہونے دینگے انہوں نے کہاکہ لوڈشیڈنگ کابراحال ہے اس سال سات ہزارمیگاواٹ کاشارٹ فال ہے شہبازشریف نے کہاتھاکہ اگر چھ مہینے میں لوڈشیڈنگ ختم نہ کی تو میرانام بدل دینا اس کانام شوزبازرکھیں یہ ہیں ان کے جھوٹ ۔یہ مکمل ناکام ہوگئے صرف کرپشن میں شیر ہیں دوسوپچاس ارب روپے اورنج لائن پر لگائیں گے اپنی جیبیں بھرتے ہیں عوام اور غریب ہوگئی ہے کاشتکاروں کے چراغ بجھ گئے ہیں پاکستان میں لوڈشیڈنگ کے بعد کاشتکاروں کاسب سے بڑامسئلہ ہے گندم کاریٹ تیرہ سو روپے رکھا گیا جبکہ کسان گیارہ سو روپے سے زیادہ نہیں مل رہا سو ارب کسانوں کی جیب سے نکال کر کھائے جارہے ہیں ان کی جب حکومت ختم ہوگی تو ہم کاشتکاروں کے حالات ٹھیک کرینگے ہم عوام کو مضبوط کرینگے تاکہ وہ اپنے فیصلے خود کریں اداروں کو مضبوط کرینگے کوئی سیاسی مداخلت نہیں ہوگی ۔

شلخ رشید ۔ شاہ محمود

مزید :

صفحہ اول -