پاکستان کے کرپشن پرسپشن انڈیکس میں بہتری آ رہی ہے : چیئر مین نیب

پاکستان کے کرپشن پرسپشن انڈیکس میں بہتری آ رہی ہے : چیئر مین نیب

  

اسلام آباد (این این آئی)نیب کے چیئرمین قمر زمان چوہدری نے کہا ہے کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کے مطابق 2013ء سے پاکستان کے کرپشن پرسپشن انڈیکس میں مسلسل بہتری آ رہی ہے ٗ بدعنوانی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی اور فراڈ روکنے کیلئے وسل بلوور پروٹیکشن کی حوصلہ افزائی ناگزیر ہے۔ نیب ہیڈ کوارٹر میں نیب افسران سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل نے 2016ء میں اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان کی کرپشن پرسپشن انڈیکس میں9 درجے بہتری آئی ہے۔ پاکستان بدعنوانی کی روک تھام کی کوششوں کے باعث سارک ممالک کیلئے رول ماڈل کی حیثیت رکھتا ہے۔ پاکستان نے یہ کامیابیاں نیب کی کوششوں سے حاصل کی ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ٹرانسپرنسی انٹرنیشنل کی رپورٹ کے مطابق 2013ء سے پاکستان کے کرپشن پرسپشن انڈیکس میں مسلسل بہتری آ رہی ہے۔ اس کے علاوہ آزاد عالمی اور بین الاقوامی اداروں پلڈاٹ اور عالمی اقتصادی فورم نے بھی بدعنوانی کی روک تھام کیلئے نیب کی کوششوں کا اعتراف کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بدعنوانی ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی اور فراڈ روکنے کیلئے وسل بلوور پروٹیکشن کی حوصلہ افزائی ناگزیر ہے۔ اس صورتحال کو مدنظر رکھتے ہوئے وسل بلوور پروٹیکشن ایکٹ کا مسودہ تیار کیا گیا ہے اور اس کے قانونی جائزہ کیلئے وزارت قانون و انصاف اور انسانی حقوق کو بھیجا گیا ہے۔ وزارت قانون نے اسے حتمی شکل دی جس کے بعد اسے وزیراعظم پاکستان نے منظور کیا۔ وسل بلوور کے مسودے کو منظوری کیلئے اب کابینہ کے اجلاس میں پیش کیا جائے گا۔ حتمی منظوری کے بعد اس پر قانون سازی کی جائے گی۔

چیئرمین نیب

مزید :

صفحہ آخر -